حکومت مذاکراتی ٹیم کا اعلان کرے ،امید ہے فریقین میں بات چیت کامیاب ہو گی ،سراج الحق

حکومت مذاکراتی ٹیم کا اعلان کرے ،امید ہے فریقین میں بات چیت کامیاب ہو گی ...

  

                              پشاور(اے این این) امیر جاعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ ملک پر 68سال سے وڈیروں ، جاگیرداروں اور انگریزوں کے کاسہ لیسوں کا قبضہ ہے ، حکومت کو طاہر القادری اور عمران خان کی گرفتاری کے وارنٹ جاری کرنے کا مشورہ نادان دوستوں نے دیا، حکومت اپنی مذاکراتی ٹیم کا اعلان کرے،امید ہے کہ فریقین میں بات چیت کامیاب ہو جائے گی،سولہ نومبر کو اسلام آباد میں سیاسی جرگہ ہوگا جس میں مسئلے پر بات چیت ہوگی،تحریک انصاف کے استعفے منظور نہ کئے جائیں۔ وہ سپیکر کے پی اسمبلی اسد قیصر سے ملاقات میں بات چیت اور المرکز اسلامی پشاور میں جماعت اسلامی ضلع پشاور کے زیر اہتمام ڈونرز کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔ سراج الحق کہا کہ حکومت اور تحریک انصاف کے درمیان مذاکرات کامیاب ہوجائیں گے کیونکہ دونوں جانب معاملے کے حل کے لئے خواہش موجود ہے اور دونوں مذاکرات کے حامی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے مذاکراتی ٹیم کا اعلان ابھی نہیں کیا گیا جو مسئلہ ہے۔سولہ نومبر کو اسلام آباد میں سیاسی جرگہ ہوگا جس میں مسئلے پر بات چیت ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان اور طاہر القادری کی گرفتاری حکومت کا غیر سیاسی فیصلہ ہے جس سے بحران میں اضافہ ہوگا ، حکومت کو طاہر القادری اور عمران خان کی گرفتاری کے وارنٹ جاری کرنے کا مشورہ نادان دوستوں نے دیا۔ انہوں نے کہا کہ نام نہاد جمہوریت اور مارشل لاءنے ملک میں لوگوں کے مسائل میں اضافہ کیا ہے۔ ملک پر 68سال سے وڈیروں ، جاگیرداروں اور انگریزوں کے کاسہ لیسوں کا قبضہ ہے جنہوں نے تحریک پاکستان کے شہداءکے خون اور ملک سے غداری کی ہے 21نومبر کو مینار پاکستان لاہور میں لاکھوں لوگ پاکستان کو حقیقی معنوں میں اسلامی ، فلاحی اور جمہوری مملکت بنانے کے لئے جمع ہونگے جس میں عوامی ایجنڈے کا اعلان کرونگا ۔ اجتماع عام میں ہزاروں کی تعداد میں خواتین شریک ہونگی۔ سراج الحق نے کہا کہ در اصل ملک اس وقت سرمایہ داروں ، جاگیر داروں اور وڈیروں کے ظالمانہ گرفت میں ہے۔ کروڑوں غریب عوام زندگی کی بنیادی سہولیات سے محروم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ ملک بھر کے مظلوم اور مجبور عوام کو منظم کرکے موجودہ استحصالی نظام کے خاتمے کے لئے 21نومبر سے ایک بڑی جدوجہد کا آغاز کرنے والے ہیں۔

مزید :

علاقائی -