ملزمان کو کٹہرے میں لا کر انصاف کے تقاضے پورے کرینگے،کامران مائیکل

ملزمان کو کٹہرے میں لا کر انصاف کے تقاضے پورے کرینگے،کامران مائیکل

  

لاہور(خصوصی رپورٹ) سینیٹر کامران مائیکل کا کہنا ہے کہ ملزمان کو قانون کے کٹہرے میں لا کر انصاف کے تقاضے پورے کئے جائیں گے۔ مسیحی جوڑے کے بچوں کے لئے 50 لاکھ روپے کے امدادی چیک کی حوالگی کی تقریب لاہور کے ایف جی اے چرچ میں منعقد کی گئی وفاقی وزیرنے چیک ڈی سی او قصور کو دیاامدادی رقم کا چیک Saving Account میں متاثرہ خاندان کے بچونکے نام پر جمع کر وایا جائے گا۔ جس سے حاصل ہونےوالا ماہانہ منافع اور 10 ایکڑ اراضی کی تما م آمدن مسیحی جوڑے کے بچوں کو دی جائے گی۔کامران مائیکل نے اپنے خطاب میں کہا کہ پاکستان ہمارا وطن ہے اور پاکستان میں ہمارے دکھ اور سکھ سانجھے ہیں تو انصاف بھی ایک ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام تو امن، برداشت اور رواداری کا درس دیتا ہے تمام مسالک کے لوگوں کو اختلافات ختم کر کے معاشرے میں مذہبی ہم آہنگی کے فروغ کے لئے کام کرنا چاہیے۔انہوں نے مزید کہا تمام مذہبی مکاتب فکر کو ایک دوسرے کے عقائدکا احترام کرنا چاہیے اس سلسلے میں علمائ، سیاسی اور مذہبی جماعتوں کے سربراہان سے پُر زور اپیل کی کہ معاشرے میں ایک ایسا ماحول تشکیل دیا جائے جس سے انتہا پسندی اور مستقبل میں ایسے واقعات کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔وفاقی وزیر نے کہا اس شرمناک واقع میں انسانیت کا قتل کیا گیا ہے اور ماضی میں اس طرح کے واقعات کے ملزمان کو قرار واقعی سزا اس وجہ سے نہیں مل سکی کہ مدعی دباﺅ میں آکر صلح کر لیتے ہیںلیکن اس بار ریاست خود مدعی بنی ہے اور وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف اس کیس کو ٹیسٹ کیس بنانا چاہتے ہیں۔ تقریب میں بشپ آف گلف بشپ آزاد مارشل، وفاقی پارلیمانی سیکرٹری برائے مذہبی امور خلیل جارج، ڈی سی او قصور، اے سی قصور اور قصور پولیس کے نمائندگان نے بھی شرکت کی ۔ وفاقی وزیر نے تمام متعلقہ محکموں بالخصوص پولیس کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا۔

کامران مائیکل

مزید :

صفحہ آخر -