تاریخ کے ذہین ترین جرنیل نے 100فوجیوں کے ساتھ ڈیڈ ھ لاکھ کی فوج کے خلاف شہر کادفاع کیا

تاریخ کے ذہین ترین جرنیل نے 100فوجیوں کے ساتھ ڈیڈ ھ لاکھ کی فوج کے خلاف شہر ...
تاریخ کے ذہین ترین جرنیل نے 100فوجیوں کے ساتھ ڈیڈ ھ لاکھ کی فوج کے خلاف شہر کادفاع کیا
تاریخ کے ذہین ترین جرنیل نے 100فوجیوں کے ساتھ ڈیڈ ھ لاکھ کی فوج کے خلاف شہر کادفاع کیا
تاریخ کے ذہین ترین جرنیل نے 100فوجیوں کے ساتھ ڈیڈ ھ لاکھ کی فوج کے خلاف شہر کادفاع کیا
تاریخ کے ذہین ترین جرنیل نے 100فوجیوں کے ساتھ ڈیڈ ھ لاکھ کی فوج کے خلاف شہر کادفاع کیا

  

بیجنگ (نیوز ڈیسک) دنیا کی عسکری تاریخ میں بڑے بڑے جرنیلوں اور ان کی ایک سے بڑھ کر ایک جنگی حکمت عملی کا ذکر ملتا ہے لیکن چینی سپہ سالار زوگ لیانگ کی ایمپٹی فورٹ (Empty Fort) حکمت عملی سب سے نرالی ہے۔

اس کا تذکرہ قدم چین کے ہان خاندان اور ان کے دور حکومت کے متعلق لکھے گئے تاریخی ناول "Romance of Three Kingdoms" میں ملتا ہے اور اس چال کا خالق اور ہیرو شویان ریاست کا سربراہ زوگ لیانگ تھا۔ زونگ نے جیٹنگ شہر کے دفاع کی ذمہ داری فوجی افسر ماسو کو سونپی تھی جو اس ذمہ داری کیلئے غیر موزوں ثابت ہوا اور دشمنی سیمایی کی فوج شہر کی طرف بڑھنے لگی۔ ایسی صورت میں ایک راستہ تو یہ تھا کہ کمزور فوج کے ساتھ طاقتور دشمن کا مقابلہ کیا جائے جبکہ دوسرا راستہ یہ تھا کہ شہر اس کے قبضے میں دب دیاجائے۔ زوگ لیانگ نے ایک تیسرا راستہ اپنا کر نہایت آسانی سے دشمن کو پسپائی پر مجبور کردیا۔ اس نے تمام فوج کو حکم دیا کہ وہ فوجی وردی کی بجائے سول لباس پہن لیں اور خود ایک لمبا چغہ پہن کر شہر کے مرکزی دروازے کے اوپر جا بیٹھا اور بانسری بجانا شروع کردی۔

دشمن کی افواج یہ دیکھ کر بہت حیران ہوئیں کہ زونگ کی طرف سے کوئی جنگی تیاری نظر آرہی تھی۔ ہر کوئی پرسکون تھا اور وہ خود اطمینان سے بانسری بجا رہا تھا۔ دشمن سیمایی کو معلوم تھا کہ زوگ انتہائی شاطر ہے اس لئے وہ سمجھا کہ یہ اسے گھیرنے کی کوئی خطرناک چال ہے اور یوں انتہائی خوفزدہ ہوکر اس نے اپنی فوجوں کو فوراً واپس لوٹنے کا حکم دے دیا۔ زوگ لیانگ کی یہ جنگ حکمت عملی عسکری تاریخ میں ایک مثال بن چکی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -