جسٹس ہائیکورٹ مسٹر جسٹس علی اکبر اقریشی کے اعزاز میں تقریب کا انعقاد

جسٹس ہائیکورٹ مسٹر جسٹس علی اکبر اقریشی کے اعزاز میں تقریب کا انعقاد

راولپنڈی(سٹی رپورٹر) ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام جسٹس ہائیکورٹ مسٹر جسٹس علی اکبر اقریشی کے اعزاز میں تقریب کا انعقاد ، جس علی اکبر قریشی 28دسمبر 2018 کو ریٹائرڈ ہوجائینگے تقریب میں وکلاء کی بہت بڑی تعداد نے شرکت کی، مسٹر جسٹس علی اکبر قریشی مسٹر جسٹس مسعود عابد نقوی مسٹر جسٹس چوہدری عبد العزیز ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج خالد نواز اور ڈسٹرکٹ بار کے عہدیداران شریک ہوئے جسٹس علی اکبر قریشی نے بار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ راولپنڈی ہائیکورٹ بار راولپنڈی ڈسٹرکٹ بار نے ہمیشہ اپنائیت سی محسوس کی ہے مجھے یہاں کام کر کے نہایت خوشی محسوس ہوئی ہے کیوں کہ یہاں کے وکلاء ججز کا احترام کرتے ہیں اور اپنے مقدمات کی بہت اچھے طریقے سے تیاری کر کے آتے ہیں ایسی ہی بار سے بہت اچھے وکلاء اور ججز نکلتے ہیں میں کوشش کرتا رہا ہوں کہ کسی بھی مقدمے کو بہت ذیادہ دیر نہ چلا یا جائے بلکہ اس کو میرٹ پر فیصلہ دے کر جلد نپٹا دیا جائے تاکہ آنے والے سائلین کے لئے آسانی پیدا ہو سکے اور میں بہت شکر گذار ہوں بار ایسوسی ایشن اور صدر بار خرم مسعود کیانی سیکرٹری جنرل راجہ عامر محمود و دیگر عہدیداران کا اس موقع پر صدر بار خرم مسعود کیانی نے اپنے خطاب میں کہا کہ جسٹس علی اکبر قریشی جیسے ججز جوڈیشری کا سرمایہ ہیں اور میں قانون کا طالبعلم ہونے کے ناطے سے کہوں گاکہ جسٹس علی اکبر قریشی نے ہمیشہ شفقت اور رہنمائی فرمائی اور نئے وکلاء کو بھی جو ریلیف بنتا تھا وہ دیا انہوں نے ہمیشہ بار اور بنچ کے درمیان تعلقات کو استوار رکھا اور اسی وجہ سے راولپنڈی بار میں کوئی ہڑتال نہیں ہوئی کیونکہ ہم سمجھتے ہیں ہڑتال ہونے کی وجہ سے دور دراز سے آنے والے سائلین کے لئے بہت ذیادہ مسائل پیدا ہوجاتے ہیں عدلیہ پر پہلے ہی مقدمات کا بہت ذیادہ دباؤ ہے اس لئے آئے دن ہڑتالیں ہونے سے یہ دباؤ مزید بڑھتا ہے اور راولپنڈی بار نے ہمیشہ ججز کی عزت کی ہے اور کوئی بھی جج خواہ وہ ہائیکورٹ کا ہو یا سیشن کورٹ کاانہوں نے راولپنڈی میں آکر ہمیشہ دلی سکون ملتا ہے کیونکہ راولپنڈی وکلاء پروفیشنل ازم میں اپنی مثال آپ ہیں میں آنے والے تمام معزز ججز جسٹس علی اکبر قریشی جسٹس مسعود عابد نقوی جسٹس چوہدری چوہدری عبد العزیز ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج خالد نواز اور تمام وکلاء کا شکریہ ادا کرتا ہوں ہمارے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج خالد نواز نے راولپنڈی کے ریکارڈ کو کمپویٹرائزڈ کر کے جو کہ تقریبا 8 لاکھ کے لگ بھگ ہے ایک بہت مشکل کام کو احسن طریقے سے انجام دیا ہے جسکے لئے میں ذاتی طور پر انکی اس کاوش کو گرانقدر کی نگاہ سے دیکھتا ہوں اور ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج خالد نواز کو جب بھی بار نے مدعو کیاتو انہوں نے بڑے ہونے کا ثبوت دیتے ہوئے ہمیشہ بارکو مثبت جواب دیا آخر میں میں تمام معزز مہمانوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر