بچوں سے بداخلاقی کرنے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں

  بچوں سے بداخلاقی کرنے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں

  



لاہور(فلم رپورٹر)شوبز کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات نکا کہنا ہے کہ بچوں سے بداخلاقی کرنے والے کسی رعائت کے مستحق نہیں ہیں ان کو پھانسی دے کر نشان عبرت بنایا جائے۔شوبز شخصیات نے وزیر اعظم پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ بچوں کے ساتھ بداخلاقی کرنے والے گینگ کو عبرتناک سزا دی جائے ان کو پھانسی سے پہلے کچھ دنوں تک اس کو آرمی کے شکاری کتوں کے سامنے ڈالا جائے جو ان درندہ صفت انسانوں کو نوچ نوچ کر کھائیں پھر ان لوگوں کو ان بچوں کے ماں باپ کے سامنے سرعام پھانسی دے شاید ان کے ماں باپ کا درد کم ہو جائے۔ہمیں نہیں لگتا کہ ان کو ان کے پھانسی دینے سے بھی ان کے ماں باپ کا درد کم ہو گا مگر ان لوگوں کو عبرت کا نشان بنائے کیونکہ یہ روز روز یہ درندگی کا کھیل ہم لوگوں سے نہیں دیکھا جاتا جن ماں باپ نے بچے پیدا کئے ہیں اور بڑے کیے ہیں یہ ان کو پتہ ہے کہ اولاد کیا چیز ہے ان درندوں کو ان چیزوں سے کوئی لینا دینا نہیں ہم آپ سے بار بار میں اپیل کرتے ہیں کہ ان لوگوں کو عبرت کا نشانہ ضرور بنایا جائے ۔شاہد حمید،شان،معمر رانا،مسعود بٹ،پرویز کلیم،میگھا،ماہ نور،شاہدہ منی،محمد قوی خان،لائبہ علی،سہراب افگن،سٹار میکر جرار رضوی،یار محمد شمسی صابری،گلفام،ہانی بلوچ،اچھی خان،ذویا قاضی،مایا سونو خان،ڈیشی راج،آغا قیصر عباس،سدرہ نور،ندا چوہدری،آفرین خان،آفرین پری،آشا چوہدری،عامر راجہ،بی جی،سفیان احمد،انوسنٹ اشفاق،محرمہ علی،عباس باجوہ،آغا حیدر،شین فریال،نادیہ علی،سوھنی بلوچ،اشرف خان،عذرا آفتاب،حیدر سلطان،بابرہ علی،تابندہ علی،ڈاکٹر اجمل ملک،مختار احمد چوہان،فیصل بخاری،چوہدری اعجاز کامران،قیصر ثناء اللہ خان،حاجی عبد الرزاق،پریسہ،حنا ملک،شہزاد چندا،ہنی البیلا،حسن مراد،امان اللہ،نجم زیدی،ثمینہ بٹ،سرفراز وکی،بینا سحر،عائشہ جاوید،ابرار ہاشمی،وقاص کیدو،زری لعل،شہہ پارہ،ستارہ بیگ،لکی ڈیئر،طاہر نوشاد،مختار چن،اسد مکھڑا،شجر عباس،نواز انجم،احمد نواز،محسن گیلانی،دلاور ملک،عباس اشرف،افشین اشرف،بینا چوہدری اور دیگر کا کہنا ہے کہ اس کے ساتھ ساتھ سوشل میڈیا پر جو گندی اور نازیبا ویڈیوز اور تصاویر وائرل ہو رہی ہیں ان کی بھی روک تھام بھی کی جائے کیونکہ یہ ساری درندگی سوشل میڈیا سے ہی جنم لے رہی ہے جو انسان یہ دیکھے گا تو وہ یہی کچھ کرے گا،ظلم کا شکار ہونے والے بچے ملک کا سرمایہ ہیں ان کو ہر قیمت پر بچانا ہوگا۔

مزید : کلچر