پچھلی سکیموں کے فنڈز روکنے کیخلاف پنجاب اسمبلی میں تحریک التواء جمع 

پچھلی سکیموں کے فنڈز روکنے کیخلاف پنجاب اسمبلی میں تحریک التواء جمع 

  



لاہور(نمائندہ خصوصی) مسلم لیگ (ن) کی رکن پنجاب اسمبلی عظمیٰ بخاری نے ورلڈ بینک کے فنڈز سے پچھلی سکیموں کے فنڈز روکنے کیخلاف پنجاب اسمبلی میں تحریک التواء جمع کرادی۔ورلڈ بینک کے فنڈز سے بننے والی پچھلی سکیموں میں قوانین کی خلاف ورزی پر فنڈز روک لیے گئے، جس سے درجنوں سکیمیں ٹھپ ہوگئیں، ورلڈبینک کا قانون کچھ کہتا رہا، کارپوریشن افسر خلاف قانون سکیموں کی بندر بانٹ میں مصروف رہے۔

، ورلڈ بینک نے 17 ترقیاتی سکیموں پر اعتراض لگا دئیے، پرانی سکیموں کی بحالی کی بجائے نئی ترقیاتی سکیمیں کیوں بنائی گئیں؟ میٹروپولیٹن کارپوریشن نے فنڈز قانون کے برعکس پبلک آفسز کی بجائے سرکاری افسروں کی رہائش گاہوں پر خرچ کردیئے۔تفصیلات کے مطابق 2018 میں 17ترقیاتی سکیمیں لگائی گئیں جن میں ایک کروڑ روپے کی رائیونڈ ڈسپوزل سٹیشن،ستوکتلہ ڈرین،حفاظتی سامان،قریشی والا گاؤں،مین روڈ شاہ پور ٹو، فاطمہ مسجد روڈ رائیونڈ روڈ،الفیصل ٹاؤن گلیوں کی تعمیر،کھوکھر روڈ،کچا کماہاں روڈ،پاجیاں ڈرین، برڈ مارکیٹ،بھاٹی چوک،سفاری پارک،فتح شیر روڈ،شاکر روڈ،انند روڈ بھی شامل ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1