نواز شریف کے حوالے سے عدالتی فیصلہ قبول کرینگے، اسلم اقبال

نواز شریف کے حوالے سے عدالتی فیصلہ قبول کرینگے، اسلم اقبال

  



لاہور (لیڈی رپورٹر)صوبائی وزیر اطلاعات و ثقافت میاں اسلم اقبال نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت نے جیل کے قیدی محمد نواز شریف کو بہترین طبی سہولتیں فراہم کیں۔ کراچی سے ڈاکٹرمنگوایا اور وزیراعلی پنجاب نے اپنا جہاز بھی اس مقصد کے لئے مختص کیا - ہم نوازشریف کی صحت پر سیاست نہیں کررہے بلکہ ان کی فیملی ان کی صحت پر سیاست کررہی ہے-نواز شریف کو جرمانے یا سزائیں عمران خان یا پی ٹی آئی کی حکومت نے نہیں دیں بلکہ عدالت نے دی ہیں اور بیماری کی وجہ سے ان کی سزا معطل ہوئی ہے۔ای سی ایل سے نام نکالنے کے لئے حکومت نے ضمانتی بانڈ مانگے ہیں انہیں یہ نہیں کہا گیا کہ وہ اپنے محلات سرکاری خزانے میں جمع کروادیں۔ اس حوالے سے عدالت جو بھی فیصلہ کرے گی اس پر مکمل عملدرآمد کیا جائے گا- صوبائی وزیر نے ان خیالات کا اظہارگزشتہ روز ڈی جی پی آر آفس میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وزیر خزانہ مخدوم ہاشم جواں بخت، ڈی جی پی آر اور متعلقہ افسران بھی پریس کانفرنس میں موجود تھے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ ماحولیاتی آلودگی اور سموگ کی روک تھام کے لئے پنجاب حکومت سنجیدہ ہے اور اس مقصد کے لئے مختصر اور طویل المیعاد منصوبہ بندی کی گئی ہے۔ سابق حکمرانوں نے شہروں میں درخت کاٹ کر کنکریٹ کے پہاڑ کھڑے کئے ان کے پاس ماحولیاتی آلودگی پر قابو پانے کے لئے نہ تو کوئی پلان تھا اور نہ ہی انہوں نے اس جانب کوئی سنجیدگی دکھائی- پی ٹی آئی کی حکومت نے گرین اینڈ کلین پاکستان پروگرام شروع کررکھا ہے جس کے تحت ملک بھر میں درخت لگائے جارہے ہیں۔لاہور میں اب تک 2لاکھ 35ہزار درخت لگائے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ 3شعبے ماحولیاتی آلودگی کا باعث بنتے ہیں جن میں ٹرانسپورٹ کا حصہ 43فیصد، صنعت 25فیصد اور زراعت 20فیصد ہے۔ صوبائی وزیر نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ مولانا فضل الرحمان کا پلان اے بری طرح ناکام ہوا اور پلان بی بھی جلد اپنی موت آپ مر جائے گا۔ پلان اے کا بنیادی مقصد کشمیر کے مسئلے سے توجہ ہٹانا، دنیا کو مذہبی شدت پسندی دکھانا، منی لانڈرز کو تحفظ دینا اور پاکستان کو ایف اے ٹی ایف کی بلیک لسٹ میں شامل کرانا تھالیکن عوام نے مولانا کے اس ایجنڈے کو یکسر مسترد کردیا۔

 اسلم اقبال

مزید : صفحہ آخر