نوازشریف کی واپسی کی نیت ہے توبانڈ دینے میں کیا حرج؟،اٹارنی جنرل

نوازشریف کی واپسی کی نیت ہے توبانڈ دینے میں کیا حرج؟،اٹارنی جنرل

  



لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) اٹارنی جنرل انور منصور خان نے کہا ہے کہ قانونی ایشو تھا جو عدالت کے سامنے رکھ دیا، عدالت اگر یہ معاملہ سننا چاہتی ہے تو ہمیں اعتراض نہیں ہے۔نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے اٹارنی جنرل نے کہا کہ کیس جلدی سننے پر بھی حکومت کو کوئی اعتراض نہیں، ہمیں احساس ہے کہ نواز شریف کی طبیعت ٹھیک نہیں ہے۔ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انور منصور خان نے کہا کہ نواز شریف عدالت سے سزا یافتہ ہیں، سزا یافتہ کیلئے قانون میں واضح ہے کہ نام نہیں نکالا جا سکتا۔ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے ضمانتی بانڈ کے بدلے جانے کی اجازت دی۔ ضمانت پاکستان میں رہنے کیلئے ملی ہے۔ واپس آنے کی نیت ہے تو بانڈ دینے میں کیا حرج ہے؟ عدالت کا فیصلہ تسلیم کریں گے، اپیل نہیں کریں گے۔

اٹارنی جنرل

مزید : صفحہ اول