لشکر جھنگوی کے سابق سربراہ آصف چھوٹو کے بھائی کی عدالتی حکم پر قبرکشائی‘ احسان پور میں تدفین‘ نمازجنازہ میں درجنوں افراد کی شرکت

لشکر جھنگوی کے سابق سربراہ آصف چھوٹو کے بھائی کی عدالتی حکم پر قبرکشائی‘ ...

  



دائرہ دین پناہ(نامہ نگار)لشکرجھنگوی کے سابق سربراہ آصف چھوٹومرحوم کے چھوٹے بھائی امیرمعاویہ عرف جگنو بھی پولیس مقابلہ میں ہلاک،عدالتی حکم پر قبرکشائی کے بعدنعش کی (بقیہ نمبر34صفحہ12پر)

احسان پورمیں تدفین، نماز جنازہ میں بیسیوؤں افرادکی شرکت،خفیہ ادارے متحرک۔تفصیل کے مطابق لشکرجھنگوی کے سابق سربراہ محمدآصف چھوٹوجسے جنوری2017میں درجن سے زائدقتل اوردہشت گردی کے مقدمات ہونے کے باعث پولیس مقابلہ میں ہلاک کردیاگیاگیاتھا جس کے بعدآصف چھوٹوکے چھوٹے بھائی امیرمعاویہ عرف جگنو ولداحمدخان قوم گاڈی سکنہ اینگروماڈل ویلیج احسان پورکوبھی چندماہ قبل شیخوپورہ میں ایک پولیس مقابلہ کے دوران ہلاک کردیاگیاتھا گزشتہ روزامیرمعاویہ عرف جگنو کی نعش کے حصول کے لیے اسکے ورثاء احمدخان گاڈی وغیرہ نے خصوصی عدالت لاہورکوقبرکشائی کے لیے باقاعدہ درخواست دی عدالت کے حکم پرقبرکشائی کے بعدمرحوم کی نعش رات گئے دائرہ دین پناہ کے نواحی قصبہ احسان پورلائی گئی صبح9بجے اینگروماڈل ویلیج احسان پورمیں اداکی گئی جس میں بیسیوؤں افراد نے شرکت کی بعدازاں مرحوم کوسپردخاک کردیاگیا اس دوران خفیہ ادارے نہ صرف متحرک رہے بلکہ معلومات بھی جمع کرتے رہے۔یہ یاد رہے کہ آصف چھوٹوکے خلاف پنڈی میں انسپکٹر راجہ ثقلین کے قتل کے علاوہ تھانہ آراء بازار لاہور،تھانہ ستوقتلہ لاہور میں قتل کے مقدمات کے علاوہ سندھ میں بھی قتل کے مقدمات تھے اور سندھ حکومت نے25لاکھ روپے سر کی قیمت مقررکررکھی تھی علاوہ ازیں آصف چھوٹو سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کے بیٹے علی حیدرگیلانی کے اغواء میں ملوث ہونے کے علاوہ افغانستان میں ٹریننگ کیمپ کے انچارج بھی رہے اور ملک اسحاق کی ہلاکت کے بعدلشکرجھنگوی کے سربراہ مقررہوئے تھے۔

امیر معاویہ

مزید : صفحہ اول /ملتان صفحہ آخر