ملتان، مجلس وحدت مسلمین کے زیراہتمام میلادالنبی ریلی کا انعقاد

ملتان، مجلس وحدت مسلمین کے زیراہتمام میلادالنبی ریلی کا انعقاد

  



ملتان(سپیشل رپورٹر) مجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے زیراہتمام ولادت باسعادت حضرت محمدؐکے سلسلے میں سالانہ میلادالنبی ریلی نماز جمعہ کے بعد جامع مسجد الحسین نیوملتان سے نکالی گئی،ریلی کی قیادت علامہ قاضی نادر حسین علوی، علامہ غلام مصطفی انصاری، متحدہ میلاد کونسل کے رہنماؤں راو محمد عارف رضوی، رکن الدین حامدی، مولانا وسیم عباس معصومی، مولانا عمران ظفر، مولانا غلام جعفر انصاری، مولانا فرمان حیدر، سلیم عباس صدیقی،مرزا وجاہت علی، مظہر عباس کات، وسیم عباس زیدی، سید دلاور (بقیہ نمبر39صفحہ12پر)

عباس زیدی، سید ندیم عباس کاظمی، عاطف حسین نے کی۔ ریلی گلشن مارکیٹ، مدنی چوک، چوک کمہارانوالہ، معصوم شاہ روڈ، علی چوک، دولت گیٹ چوک، حسین آگاہی سے ہوتی ہوئی گھنٹہ گھر چوک پہنچی، جہاں قائدین نے خطاب کیا، راستے میں جگہ جگہ ریلی کے شرکاء کا استقبال کیا گیا، چوک کمہاراں والا، کچی سرائے اور دولت گیٹ چوک پر استقبال کیا گیا،ریلی میں مسجد نبوی کے ماڈل اور سبز پرچم نمایاں تھے، ریلی سے خطاب کرتے ہوئے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ ملک کو اس وقت اتحاد و وحدت کی اشد ضرورت ہے، رسول خدا کی ذات تمام عالم اسلام کے لئے نقطہ اتحاد ہے، ہمیں رسول خدا کی محبت میں ایک ہونے کی ضرورت ہے، شیعہ سنی وحدت وقت کی اہم ضرورت ہے، ہم اس ملک میں شیعہ سنی وحدت کے لئے اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے، حکومت کی جانب سے عید میلادالنبی کے موقع پر انتظامات قابل تحسین ہیں۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے متحدہ میلاد کونسل کے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ الحمداللہ ہر سال عاشقان مصطفی کے جوش و جذبے اور ولولے میں اضافہ نظر آرہا ہے، متحدہ میلاد کونسل ایم ڈبلیو ایم کی جانب سے میلادالنبی ریلی کے انعقاد پر مبارکباد پیش کرتی ہے، ہمیں اس شہر اور ملک کو خوبصورت بنانے کے لئے اسی اخوت اور محبت کی ضرورت ہے، ہم عاشقان مصطفی کے خادم ہیں،علامہ قاضی نادر علوی کا کہنا تھا کہ اس وقت جو ملکی صورتحال ہے اس میں رسول خدا کی عملی سیرت کو اپنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ صرف زبانی دعوے خرچ سے معاشرہ میں امن قائم نہیں ہو سکتا، ہر شخص اپنی ذمہ داری ادا کرے گا تب ملک میں امن اور خوشحالی آئے گی۔ ریلی میں فخر نسیم، رانا فیضان الحسینی، ثقلین نقوی اور دیگر نے شرکت کی۔ ریلی کے آخر میں ملکی سلامتی کے لیے خصوصی دعا کرائی گئی۔

میلاد

مزید : صفحہ اول /ملتان صفحہ آخر