محلہ جوگن شاہ میں مڈل سکول کو ہائی کا درجہ دے رہے ہیں:ضیاء اللہ بنگش

 محلہ جوگن شاہ میں مڈل سکول کو ہائی کا درجہ دے رہے ہیں:ضیاء اللہ بنگش

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)محکمہ سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی خیبرپختونخوا نے پشاور میں مقیم سکھ پاکستانیوں کے لئے ملک کے سب سے پہلے بابا گرونانک سکول آف سائنس، ٹیکنالوجی، ایجوکیشن، آرٹ و میتھس (سٹیم) کاافتتاح کردیا۔ اس موقع پر گوردوارہ بھائی جوگا سنگھ میں سکھ برادری سے خطاب کرتے ہوئے  وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کامران بنگش نے کہا کہ محکمہ سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی صوبے میں رہنے والے تمام مکتبہ فکر کے لئے ہر لحاظ سے یکساں مواقع دینے کے لئے کوشاں ہے تاکہ ترقی کی دوڑ میں مسلمان، سکھ، عیسائی، ہندو اور دیگر مکاتب فکر کو یکجا کرکے ملکی معیشت بہتر بنائی جا سکے۔ خیبرپختونخوا میں سائنس و آئی ٹی کے حوالے سے آگے بڑھنے کے لئے ایک بہترین مائنڈ سیٹ موجود ہے جس کے لئے یہاں پر ڈیجیٹل مارکیٹ کے لئے زمین ہموار کرنا ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے جس سے صوبہ میں روزگار کے مواقع بھی پیدا ہوں گے اور غربت پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان کی ہدایات کے مطابق پاکستان کو اسلامی فلاحی ریاست بنانے کے لئے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لا رہے ہیں جس کی بہترین مثال بابا گرونانک دیو جی کی 550  ویں برسی کی تقریبات ہیں جس کو ساری دنیا کے لئے ایک نمونہ بین المذاہب ہم آہنگی بنایا گیا۔ پشاور میں سکھ پاکستانیوں کے لئے بابا گرونانک سکول آف سٹیم بھی اسی کی ایک کڑی ہے جس میں پیر کے روز سے باقاعدہ طور پر کلاسسز شروع ہوجائیں گی۔ اس انسٹیٹیوٹ میں سکھ برادری سمیت تمام مکاتب فکر کے بچے سائنس، ٹیکنالوجی، ایجوکیشن، آرٹ اور میتھس پر مختلف قسم کے تربیت لیں گے۔ صوبائی معاون برائے سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کامران بنگش نے بابا گرونانک سکول آف سٹیم کو تاریخی قرار دیتے ہوئے کہا کہ محکمہ سائنس و آئی ٹی کی جانب سے سکھ پاکستانیوں کے لئے یہ ایک تحفہ ہے جسے کرتارپور راہداری پراجیکٹ کے ساتھ تاریخ میں ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ انفارمیشن ٹیکنالوجی کی تربیت کا یہ سلسلہ صرف پشاور تک محدود نہیں رہے گا اسے صوبے کے تمام اضلاع تک پھیلائیں گے۔ انہوں نے واضح کیا کہ بابا گرونانک سکول آف سٹیم کے طرز پر صوبہ بھر میں دیگر اقلیتی برادریوں کے لئے مختلف منصوبے شروع کر رہے ہیں تاکہ ترقی کے دوڑ میں سب اپنا حصہ ڈال سکیں۔ اس موقع پر مشیر تعلیم ضیاء اللہ بنگش نے باباگرونانک سکول آف سٹیم کو محکمہ سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کی کامیابی قرار دیتے ہوئے کہا کہ صوبے میں اقلیتی برادری کو ترقی کی دوڑ میں شامل کرنے کی اس کوشش کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا محکمہ تعلیم کی کوشش ہے کہ تعلیمی سیکٹر میں جہاں کہیں بھی گنجائش ہو اقلیتی برادری کے لئے نمایاں اور بہترین سہولیات دی جائیں۔  باباگرونانک سکول آف سٹیم کی طرز پر مزید ادارے بنانے کے لئے محکمہ تعلیم بھی اپنی کوششیں جاری رکھے گا تاکہ خیبرپختونخوا کا ایک بہترین امیج دنیا کے سامنے پیش کیا جا سکے۔  مشیرتعلیم ضیاء اللہ بنگش نے محلہ جوگن شاہ میں موجود لڑکوں کے سرکاری مڈل سکول کو ہائی سکول کا درجہ دینے کا اعلان بھی کیا۔ باباگرونانک سکول آف سٹیم کے افتتاح کے موقع پر معاون خصوصی کامران بنگش اور مشیر تعلیم ضیاء اللہ بنگش نے بابا گرونانک دیو جی کی 550  ویں جنم دن کا کیک بھی کاٹااور بابا گرونانک سکول آف سٹیم میں طلباء سے بھی ملے۔  

مزید : صفحہ اول /پشاورصفحہ آخر