کیا ای سی ایل سے نکالنے کیلئے شرائط لگائی جا سکتی ہیں ؟،لاہور ہائیکورٹ ،نوازشریف کی درخواست پر سماعت کچھ دیر کیلئے ملتوی

کیا ای سی ایل سے نکالنے کیلئے شرائط لگائی جا سکتی ہیں ؟،لاہور ہائیکورٹ ...
کیا ای سی ایل سے نکالنے کیلئے شرائط لگائی جا سکتی ہیں ؟،لاہور ہائیکورٹ ،نوازشریف کی درخواست پر سماعت کچھ دیر کیلئے ملتوی

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہور ہائیکورٹ نے نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست پر سماعت کچھ دیر کیلئے ملتوی کردی،عدالت نے استفسار کیا کہ کیا ای سی ایل سے نکالنے کیلئے شرائط لگائی جا سکتی ہیں ؟،ضمانت کے بعدایسی شرائط لاگوہوں تو کیا اس سے عدالتی فیصلے کو تقویت ملے گی یا نہیں ؟،عدالت نے مزید استفسار کیا کہ کیاحکومت اپنے فیصلے پر نظرثانی کرنا چاہتی ہے یا نہیں ؟

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف کی ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست پر سماعت ہوئی،جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے سماعت کی،اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے،پولیس کی بھاری نفری احاطہ عدالت میں تعیناتی تھی،مسلم لیگ ن کے صدر شہبازشریف، پرویز رشید، احسن اقبال،امیر مقام،عظمیٰ بخاری اور دیگررہنما عدالت میں موجود رہے،

عدالت نے کہا کہ سماعت سے پہلے کچھ سوالات کا جواب جاننا چاہتے ہیں ، عدالت نے استفسار کیا کہ کیا ای سی ایل سے نکالنے کیلئے شرائط لگائی جا سکتی ہیں ؟،ضمانت کے بعدایسی شرائط لاگوہوں تو کیا اس سے عدالتی فیصلے کو تقویت ملے گی یا نہیں ؟،عدالت نے مزید استفسار کیا کہ کیاحکومت اپنے فیصلے پر نظرثانی کرنا چاہتی ہے یا نہیں ؟۔عدالت نے استفسار کیا کہ کیا درخواست گزارادائیگی کے لیے کوئی اور طریقہ ڈھونڈنے کو تیار ہے ؟کیا لگائی گئی شرائط علیحدہ کی جا سکتی ہیں؟کیا کوئی چیز میمورنڈم میں شامل یا نکالی جا سکتی ہے؟ عدالت نے مزید استفسار کیا کہ کیا میمورنڈم انسانی بنیادوں پر جاری کیا گیا؟ کیا فریقین اپنے انڈیمنٹی بانڈز میں کمی کر سکتے ہیں؟ کیا فریقین نواز شریف کی واپسی سے متعلق یا کوئی رعایت کی بات کر سکتے ہیں؟۔

حکومتی وکیل نے کہا کہ میڈیکل رپورٹ کے مطابق نوازشریف کی حالت تشویشناک ہے،ایڈیشنل اے جی نے کہا کہ نوازشریف بیرون ملک علاج کرانا چاہتے ہیں تو کراسکتے ہیں ،بیرون ملک علاج کیلئے نوازشریف عدالت کو مطمئن کریں ۔

امجد پرویز ایڈووکیٹ نے کہا کہ جو شرائط بھی عائد کی گئی ہیں وہ عدالت کے ذریعے ہونا چاہیے تھیں، عدالت نے استفسار کیا کہ کیا آپ درخواست گزار سے ہدایات لینا چاہتے ہیں؟امجد پرویز ایڈووکیٹ نے کہا کہ شہباز شریف کمرہ عدالت میں ہی ہیں، عدالت شہباز شریف سے مشورہ کرنے کیلئے 15 سے 20 منٹ دے دے،عدالت نے سماعت15 منٹ کیلئے ملتوی کردی

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور