پہلے ڈرافٹ دیکھیں، پھر فیصلہ کریں، وفاقی حکومت کا ایڈیشنل اٹارنی جنرل کو مشورہ

پہلے ڈرافٹ دیکھیں، پھر فیصلہ کریں، وفاقی حکومت کا ایڈیشنل اٹارنی جنرل کو ...
پہلے ڈرافٹ دیکھیں، پھر فیصلہ کریں، وفاقی حکومت کا ایڈیشنل اٹارنی جنرل کو مشورہ

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق وزیراعظم نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کے حوالے سے بیان حلفی مانگنے پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل اشتیاق احمدخان نے تحریری ڈرافٹ پرحکومت کو آگاہ کر دیا،وفاقی حکومت نے ایڈیشنل اٹارنی جنرل کو مشورہ دیا کہ پہلے ڈرافٹ دیکھیں، پھر فیصلہ کریں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق نوازشریف کی جانب سے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست پر مسلم لیگ نون کے رہنما کی جانب سے عدالت میں بیان حلفی کا ڈرافٹ جمع کرادیا،ڈرافٹ ججز چیمبر میں بھجوایاگیاہے،دوصفحات پر مشتمل مسودہ ہاتھ سے لکھا گیاہے،امجد پرویزایڈووکیٹ نے دو صفحات پر مبنی بیان حلفی کاڈرا فٹ عدالت میں جمع کروا دیا۔

ڈرافٹ کے متن میں کہاگیاہے کہ نوازشریف پاکستان کے ڈاکٹرز کی تجویز پر بیرون ملک علاج کیلئے جارہے ہیں۔میاں نواز شریف صحتیاب ہونے اور ڈاکٹرز کی اجازت ملنے کے بعد وطن واپس آجائیں گے اور تمام مقدمات کا سامنا کریں گے۔

اس سے پہلے عدالت نے نواز شریف اور شہباز شریف کے وکلا سے بیان حلفی جمع کرانے کا کہا تھااور حکومتی وکیل سے بھی پوچھا تھا کہ انہیں ڈرافٹ جمع کرانے پر کوئی اعتراض تو نہیں ہے جس پر سرکاری وکیل نے کہا تھا کہ انہیں کوئی اعتراض نہیں ہے۔ایڈیشنل اٹارنی جنرل اشتیاق احمدخان نے تحریری ڈرافٹ پرحکومت کو آگاہ کر دیا،وفاقی حکومت نے ایڈیشنل اٹارنی جنرل کو مشورہ دیا کہ پہلے ڈرافٹ دیکھیں، پھر فیصلہ کریں۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور