نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا عدالتی ڈرافٹ، سرکاری وکلا نے کیا اعتراض اٹھادیا؟

نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا عدالتی ڈرافٹ، سرکاری وکلا نے کیا ...
نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا عدالتی ڈرافٹ، سرکاری وکلا نے کیا اعتراض اٹھادیا؟

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)نواز شریف کا نام غیر مشروط طور پر ای سی ایل سے نکالنے کے کیس میں لاہور ہائیکورٹ کی جانب سے پیش کیے جانے والے ڈرافٹ کی سرکاری وکلا نے مخالفت کردی۔

لاہور ہائیکورٹ کی جانب سے نواز شریف کو بیرون ملک علاج کی اجازت کیلئے پیش کیے جانے والے ڈرافٹ پر سرکاری وکلا نے اعتراض اٹھادیا۔ سرکاری وکلا کا کہنا ہے کہ عدالتی ڈرافٹ میں کسی قسم کی گارنٹی نہیں مانگی گئی۔

دوسری جانب مسلم لیگ ن کے وکلا نے عدالتی ڈرافٹ کو قبول کرلیا ہے، مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ انہیں عدالتی پیشکش پر کوئی اعتراض نہیں ہے۔

خیال رہے کہ عدالت نے نئے بیان حلفی میں نواز شریف کو بیرون ملک علاج کیلئے 4 ہفتوں کا وقت دیا ہے، اگر نواز شریف کی صحت بہتر نہیں ہوتی تو اس مدت میں توسیع کی جاسکتی ہے۔ عدالت کے ڈرافٹ میں کہا گیا ہے کہ حکومتی نمائندہ سفارتخانے کے ذریعے نواز شریف سے رابطہ کرے گا۔

مزید : قومی