نواز شریف کا مسئلہ انسانی اور قانونی ہے،اسے سیاسی نہ بنایا جائے:فردوس عاشق اعوان

نواز شریف کا مسئلہ انسانی اور قانونی ہے،اسے سیاسی نہ بنایا جائے:فردوس عاشق ...
نواز شریف کا مسئلہ انسانی اور قانونی ہے،اسے سیاسی نہ بنایا جائے:فردوس عاشق اعوان

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان  آن لائن)معاون خصوصی اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ نواز شریف کا مسئلہ انسانی اور قانونی ہے،اُسے سیاسی نہ بنایا جائے،وزیراعظم عمران خان  کی تمام ترجمانوں کو واضح ہدایات تھی کہ نواز شریف کی صحت پر بیان بازی نہ کی جائے،وزیراعظم کے جذبہ خیر سگالی کو سرہانے کی بجائے  حکومت کی نیت پر بے بنیاد شک اور انتقام پسندی کا تاثر دیا گیا جو قابل افسوس ہے۔

اسلام آباد میں اٹارنی جنرل انور منصور خان کے ہمراہ پریس کانفرنسکرتے ہوئے ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ معزز عدالت نے نواز شریف کی درخواست پر فیصلہ سنایا،ہم عدالتی فیصلےکااحترام کرتےہیں،حکومت کاپہلےدن سےموقف تھا کہ نواز شریف کا انسانی اورقانونی مسئلہ ہے،اسے سیاسی نہ بنایا جائے،وزیراعظم نے کشادہ دلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے نہ صرف میڈیکل بورڈ کی سہولت فراہم کی بلکہ ہدایت کی کہ نواز شریف کے لیے بہترین طبی سہولیات یقینی بنائی جائیں مگر بدقسمتی سے حکومت کی نیت پر نہ صرف بے بنیاد شک کیا گیا بلکہ وزیرعظم کی  اس نیک نیتی کو مختلف القابات سے نوازتے ہوئے انتقام پسندی کا تاثر دیا گیا جس کی حکومت نے تردید کی۔

اُنہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے اپنے تمام حکومتی ترجمانوں کو میاں نواز شریف کی صحت پر کسی قسم کی سیاست کرنے اور اس حوالے سے سیاسی بیان دینے سے منع کیااور ہدایات دیں کہ نواز شریف کی صحت حکومت کی اولین ترجیح ہے،اسی لیے حکومت نے نوازشریف کی صحت پر ہر مرحلے پر آسانی فراہم کی اور حکومت نواز شریف کی صحت کا معاملہ کابینہ میں لے کرگئی،کابینہ نےشریف خاندان کےسابقہ ریکارڈ کو سامنے رکھتے ہوئےا نڈیمنٹی بانڈ  مانگا کیونکہ شریف خاندان ہمیشہ اپنے وعدے کی خلاف ورزی کرتا رہا ہے، ان کے قول و فعل میں ہمیشہ تضاد رہا ہے،ان کا سابقہ ماضی پوری قوم کے سامنے ہے کہ اُنہوں نے ہمیشہ معاہدے سے انکاری  کی اور اپنے وعدوں کی خلاف ورزی کی،افسوس اس بات کا ہے کہ شورٹی بانڈ پرواویلا کیا گیا،حکومت کا موقف تھا کہ نوازشریف کی صحت دیکھتےہوئے اِنہیں فوراً جانےدیاجائے،بجائے اس کےشریف فیملی حکومت کےجذبہ خیرسگالی کی تعریف کرتی ،اُلٹا الزام تراشی شروع کر دی۔

معاون خصوصی نے کہا کہ جمہوری روایات کے مطابق سیاسی جماعتیں ایک دوسرے سے سیاسی پنچہ آزمائی کرتی ہیں مگر قانونی اور آئینی مسئلے پر سیاست کا سہارا لینا سیاسی دائو پیچ استعمال کرنا اور عدالتی محاذ پر جا کر سیاسی مقصد کو بیان کرنا قابل مذمت عمل ہے ہم اس کو افسوسناک قرار دیتے ہیں،ہمیں نواز شریف کی صحت بہت عزیز ہے (ن) لیگ جو سیاسی بیچ بو رہی ہے وہ قابل افسوس ہے، انسانی ہمدردی کی قدر جو انہیں کرنی چاہیے وہ ہمیں نظر نہیں آ رہی حضرت علیؓ کا قول ہے کہ ''جس پر تم احسان کرو اس کے شر سے بچو'' حکومت کے خیر سگالی کے جذبے کی (ن) لیگ نے جو منفی انداز میں پذیرائی کی وہ قابل افسوس ہے۔

مزید : قومی