ہرسنگین جرم دہشتگردی کے زمرے میں نہیں آتا،دہشتگردی کی تعریف پررواں ماہ فیصلہ دیں گے،سپریم کورٹ کا مجرم کالے خان کو رہا کرنے کا حکم

ہرسنگین جرم دہشتگردی کے زمرے میں نہیں آتا،دہشتگردی کی تعریف پررواں ماہ ...
ہرسنگین جرم دہشتگردی کے زمرے میں نہیں آتا،دہشتگردی کی تعریف پررواں ماہ فیصلہ دیں گے،سپریم کورٹ کا مجرم کالے خان کو رہا کرنے کا حکم

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے دہشتگردی کیس کے مجرم کالے خان کی رہائی کا حکم دیدیا،چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہرسنگین جرم دہشتگردی کے زمرے میں نہیں آتا،دہشتگردی کی تعریف پررواں ماہ فیصلہ دیں گے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان میں دہشتگردی کیس میں مجرم کالے خان کی سزا کیخلاف اپیل پر سماعت ہوئی ،چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے سماعت کی ،ٹرائل کورٹ نے مجرم کوسزائے موت جبکہ ہائیکورٹ نے عمرقیدکی سزادی تھی۔ سپریم کورٹ نے مجرم کالے خان کو رہائی کا حکم دیدیا۔

چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہرسنگین جرم دہشتگردی کے زمرے میں نہیں آتا،دہشتگردی کی تعریف پررواں ماہ فیصلہ دیں گے،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ دہشتگردی کی تعریف سے بہت سے ابہام دورہوجائیں گے۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد