انجمن تاجران سندھ نے ٹیکسوں کے ظالمانہ طریقہ کار کے خلاف17اکتوبر کو علامتی بھوک ہڑتال کی حمایت کردی

انجمن تاجران سندھ نے ٹیکسوں کے ظالمانہ طریقہ کار کے خلاف17اکتوبر کو علامتی ...
انجمن تاجران سندھ نے ٹیکسوں کے ظالمانہ طریقہ کار کے خلاف17اکتوبر کو علامتی بھوک ہڑتال کی حمایت کردی

  



کراچی(این این آئی)انجمن تاجران سندھ نے کراچی کی تاجر برادری کی طرف سے ٹیکسوں کے ظالمانہ طریقہ کار کے خلاف 17 اکتوبر کو علامتی بھوک ہڑتال کی حمایت کرتے ہوئے شرکت کا اعلان کیا ہے۔

انجمن تاجران سندھ کراچی ڈویژن کے صدر جاوید شمس نے ایک بیان میں کہاکہ حکومت نے تاجروں سے بار بار مذاکرات کیے مگر کوئی نتیجہ نہیں نکلاجس کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔حکومت کو پورے پاکستان کے ایک کروڑ سے زائد تاجروں کی بات کو سننا چاہیے۔جاوید شمس نے کہاکہ تاجربرادری ٹیکس دینے کی مخالف نہیں بلکہ صرف ٹیکس وصولی کے طریقہ کار کے خلاف ہے جس کو باہمی گفت وشنید کے بعد حل کیا جاسکتا ہے مگر معاملے کو حل کی طرف لے جانے کے لیے حقیقی معنوں میں کوئی اقدامات نہیں کیے گئے۔ انہوں نے حکومت سے مایوس ہوکر چیف آف آرمی اسٹاف سے درخواست کی کہ آرمی چیف اس اہم مسئلے کے حل میں اپنا کردار ادا کریں تاکہ ملک معاشی بحران سے نکل سکے اور کاروباری مندی کا خاتمہ ہو اور ملک میں خوشحالی آئے۔انہوں نے مزید کہاکہ کراچی سب سے زیادہ ٹیکس دیتا ہے مگر اس کو اس کا نہ جائز حق دیاجاتا ہے اور نہ ہی توجہ دی جاتی ہے لہٰذا ہمارا مطالبہ ہے کہ شہرِقائد کے ساتھ زیادتی بند کی جائے اور کراچی کواس کا جائز حق دیاجائے بصورت دیگر تاجربرادری ہر ظلم اور ناانصافی کے خلاف اپنا احتجاج ریکارڈ کرائے گی۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی


loading...