فضل الرحمن کے احتجاج سے ملک کونقصان ہوا تو ایکشن لینا پڑے گا ، مذاکراتی کمیٹی کے سربراہ نے واضح کردیا

فضل الرحمن کے احتجاج سے ملک کونقصان ہوا تو ایکشن لینا پڑے گا ، مذاکراتی کمیٹی ...
فضل الرحمن کے احتجاج سے ملک کونقصان ہوا تو ایکشن لینا پڑے گا ، مذاکراتی کمیٹی کے سربراہ نے واضح کردیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر دفاع پرویز خٹک نے کہاہے کہ اگرمو لانا فضل الرحمان کا کوئی ایجنڈہ ہے تو سامنے رکھیں لیکن اگر کوئی ایجنڈہ ہی نہیں ہے اوراحتجاج سے ملک کونقصان ہوا تو مجبوراً ایکشن لینا پڑے گا ۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”دنیا کامران خان کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے پرویز خٹک نے کہا کہ تحریک انصاف کی کور کمیٹی کے اجلاس میں یہ کہا گیاہے کہ ہم کوغیر سیاسی باتیں نہیں کرنی چاہئے ، احتجاج مولانا فضل الرحمان کاحق ہے لیکن اگر امن وامان کامسئلہ پیدا کیاگیا تو پھر حکومت فوری ایکشن لے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ہم مولانا فضل الرحمن سے درخواست کرتے ہیں کہ بیٹھیں اوربتائیں کہ کیا مسئلہ ہے لیکن اگر وہ ڈکٹیٹر بننا چاہتے ہیں اور اپنی فورس سے حکومت کو ختم کرنا چاہتے ہیں تو پھر ہم یہ نہیں کرنے دیں گے ۔

پرویز خٹک کا کہنا تھا کہ اگر مو لانا فضل الرحمان کا کوئی ایجنڈہ ہے تو سامنے رکھیں لیکن اگر کوئی ایجنڈہ ہی نہیں ہے اوراحتجاج سے ملک کونقصان ہوا تو مجبوراً ایکشن لینا پڑے گا ۔ انہوں نے کہا کہ پرامن احتجاج سب کاحق ہے ، مسئلہ کشمیرپر سب کومتحدہونے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہا کہ کمیٹی وزیر اعظم کی ہدایت پر بنائی گئی ہے ، منتخب حکومت کو کوئی اس طرح نہیں ہٹا سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کو بات کرنی پڑے گی لیکن اگر وہ جنگ کریں گے توپھر مجبوراً حکومت کوبھی ایکشن لینا پڑے گا ۔

مزید : قومی


loading...