افغانستان میں شہزادہ ہیری کو نشانہ بنایا گیا:طالبان

افغانستان میں شہزادہ ہیری کو نشانہ بنایا گیا:طالبان
افغانستان میں شہزادہ ہیری کو نشانہ بنایا گیا:طالبان

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن(بیورورپورٹ) شہزادہ ہیری افغانستان میں کیمپ باشن ملٹری کمپاﺅنڈ پر ہونے والے حملے کا بنیادی ہدف تھے۔ ایک طالبان کمانڈر نے دعوی کیا ہے کہ حملہ کا مرکزی ہدف ہیری تھے تاہم دیگر ذرائع ابلاغ کے مطابق یہ حملہ اسلام مخالف فلم پر انتقام کے لئے کیا گیا ایک رات قبل ہونے والے حملہ میں شہزادہ محفوظ رہا تاہم دو امریکی میرینز ہلاک اور کئی بہت زیادہ زخمی ہوئے ۔ایک روز قبل ہی ایک غیر متعلقہ واقعے جی فرسٹ بٹالین گریناڈیئر گارڈز کا ایک برطانوی فوجی سڑک کنارے نصب بم سے ہلاک ہوا ۔شہزادہ ہیری برطانوی فوج میں کیپٹن کی حیثیت سے دوسری بار کیمپ باشن پر تعینات ہوئے ہیں۔ امریکی حکام نے بتایا کہ مسلح باغیوں نے حملہ میں بھاری ہتھیاروں کا استعمال کیا جن میں مارٹرز، راکٹ یا راکٹ پروپیلڈ گرینڈز بشمول چھوٹا آتشیں اسلحہ شامل تھا۔ جس وقت حملہ ہوا ہیری دو کلو میٹر کے فاصلہ پر اپاچی حملہ آور ہیلی کاپٹروں کے دیگر کریو ارکان کے ہمراہ تھے۔ وہ حملہ آور ہیلی کاپٹرز میں شریک پائلٹ گنر ہیں۔ کسی برطانوی فوجی کے ہلاک یا زخمی ہونے کی کوئی اطلاع نہیں۔ افغانستان میں انٹرنیشنل سیکورٹی اسسٹنس فورس کولیشن (ایساف) نے کہا ہے کہ حملہ بیس کی شمال مشرقی جانب ایک ائرفیلڈ کے نزدیک ہوا جہاں امریکی فورسز کیمپ لیڈر میک میں قیام پذیر ہیں۔ وزارت دفاع کے ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ حملہ اسلام مخالف فلم کے ردعمل میں کیا گیا ۔ ایساف کے میجر مارٹن کرائٹن کے مطابق اس حملے میں باغیوں کی فائرنگ سے بیس پر متعدد طیارے، ہینگرز اور دیگر عمارتیں تباہ ہوگئی ہیں۔

مزید : بین الاقوامی