بھارتی کشمیر میں مسلح تحریک دوبارہ زور پکڑ رہی ہے ،بھارتی اخبار ہندو

بھارتی کشمیر میں مسلح تحریک دوبارہ زور پکڑ رہی ہے ،بھارتی اخبار ہندو

نئی دہلی (کے پی آئی)بھارتی اخبار ہندو نے دعویٰ کیا ہے کہ بھارتی کشمیر میں مسلح تحریک دوبارہ زور پکڑ رہی ہے 1990ء میں دس ہزار سے زائد عسکریت پسند رکھنے والی تنظیم حزب المجاہدین اب بھی سب سے بڑی عسکری تنظیم ہے اس دفعہ حزب المجاہدین کو پاکستان کے بجائے مقامی سطح پر عسکریت پسند میسر آ رہے ہیں۔جموں و کشمیر پولیس کی 2004 ء رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ حزب المجاہدین کے پاس تین ہزار مسلح کارکن موجود ہیں اب پولیس کا کہنا ہے کہ اب مقامی سطح پر دو سو سے زائد عساکر موجود ہین ۔

۔ رپورٹ کے مطابق عسکری تنظیم حزب المجاہدین پھر سے افرادی قوت میں صف اول پر پہنچ گئی ہے جبکہ اس تنظیم میں موجود مجاہدین میں سے بیشتر مقامی ہیں۔ مجاہدوں کی نئی صف بندی اور مقامی سطح پر نوجوانوں کی طرف سے مجاہدوں کی تنظیموں میں شمولیت کی وجہ سے بھارتی سیکیورٹی ادارے سکت سکتے ہیں رہ گئے ہیں۔ اخبار کے مطابق حزب المجاہدین نے لشکر طیبہ کو افرادی قوت میں پیچھے چھوڑ دیا ہے اور پھر اول نمبر حاصل کر لیا ہے۔حزب المجاہدین میں شامل بیشتر مجاہد مقامی ہیں جبکہ لشکر طیبہ میں اس کے برعکس بیشتر مجاہدوں کی تعداد غیر ملکی ہے۔فی الوقت ریاست میں مجموعی طور پر مجاہدوں کی تعداد 200 کے قریب ہیں جن میں حزب المجاہدین سے وابستہ مجاہدوں کی تعداد 80جبکہ لشکر طیبہ کے عساکروں کی تعداد 60 کے قریب ہیں۔

مزید : عالمی منظر