جرائم کے سدباب کیلئے پولیس قیادت کو مل بیٹھ کر حکمت عملی بنانا ہو گی ،ڈاکٹر حیدر اشرف

جرائم کے سدباب کیلئے پولیس قیادت کو مل بیٹھ کر حکمت عملی بنانا ہو گی ،ڈاکٹر ...

لاہور(کرائم سیل)ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے کہا ہے کہ جب تک ایس پی ،ڈی ایس پی او ر ایس ایچ او مل بیٹھ کر جرائم کی شرح کم کرنے کے لئے حکمت عملی نہیں بنائیں گے تب تک کرائم کنٹرول نہیں ہو سکتے۔ایس ایچ او روزانہ کی بنیاد پرایوئننگ ڈیلی بریشن کے ذریعے اہلکاروں کے ساتھ بیٹھیں اور کرائم کو کم کرنے کے لئے حکمت عملی وضع کریں ۔سرچ آپریشز روزانہ کی بنیاد پر کئے جائیں گے اور گاڑیوں و موٹر سائیکل سواروں کی سخت چیکنگ کی جائے ۔بیٹ افسران اپنے کانسٹیبلان کے ذریعے اہم شاہراؤں پر گشت بڑھائیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روزپولیس لائنز قلعہ گجر سنگھ میں سول لائنز ڈویژن کے گزشتہ ماہ کی کارکردگی کے حوالہ سے جائزہ میٹنگ کے دوران خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ایس پی سول لائنز ہارون الرشید ،تمام سرکل افسران ،ایس ایچ او ز ،ایڈمن و بیٹ افسران نے شرکت کی ۔ڈ ی آئی جی آپریشز ڈاکٹر حیدر اشرف نے ڈکیتی کی وارتیں بڑھنے پرایس ایچ او سول لائنز عابد رشیدکو کرائم کنٹرول کرنے کی ہدایت ،اشتہاری نہ پکڑنے اور چوری بڑ ھنے پر ایس ایچ او ایس ایچ او قلعہ گجر سنگھ مقصود احمدکی سرزنش ،اشتہاری نہ پکڑنے پر ایس ایچ او مزنگ جاوید اقبال کو کارکردگی بہتر کرنے کی ہدایت ،موٹر سائیکل چوری بڑھنے پر ایس ایچ او لٹن روڈ میاں احسان اللہ کی سرزنش ،کار اورموٹر سائیکل چوری بڑھنے پر تھانہ شالیما ر کے چاروں بیٹ افسران کو شوکاز اورایس ایچ او شالیمار رضوان الہی کو آخری موقع، اشتہاری نہ پکڑنے پر ایس ایچ او مغلپورہ شہباز احمد اور ایس ایچ او گجرہ پورہ اشتیاق احمد کو کارکردگی بہتر کرنے کی ہدایت اور کرائم بڑھنے پرایس ایچ او پرانی انارکلی نثار احمدکو جرائم پر قابو پانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ جو ایس ایچ او کرائم فائٹر کے طور پر کام کرے گا وہی یہاں تھانے تعینات میں رہے گا ۔

مزید : علاقائی