اوورسیز پاکستانی خاندان کاقبضہ مافیا کیخلاف ہائیکورٹ سے رجوع ایس ایچ او برکی طلب

اوورسیز پاکستانی خاندان کاقبضہ مافیا کیخلاف ہائیکورٹ سے رجوع ایس ایچ او ...

لاہور (نامہ نگار خصوصی)اوورسیز پاکستانی خاندان انصاف کیلئے پولیس اور عدالتوں کے دھکے کھانے پر مجبورہوگیا، بے بس خاندان کو قبضہ مافیا کے خلاف مقدمہ درج کروانے میں شدید مشکلات کا سامنا ہے، اوورسیز پاکستانی کمیشن پنجاب بھی مجبور خاندان کو تسلیوں کے سوا کچھ نہ دے سکا، لاہور ہائیکورٹ نے 17ستمبر کو ایس ایچ او برکی کو طلب کر لیاہے،مسٹرجسٹس فرخ گلزاراعوان نے پاکستانی نژاد برطانوی خاتون آمنہ جاوید کی درخواست پر سماعت شروع کی تو درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ انہوں نے امپیریل گارڈن لاہور میں ایک کروڑ روپے کے عوض تین دکانیں خریدیں تاہم قبضہ مافیا کے تین افراد منشا گھمن، علی اطہر اور شاہد بٹ نے جعلی دستاویزات بنا کر ان کی دکانوں پر قبضہ کر لیا، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ اگست میں وزیر اعلیٰ پنجاب کے قائم کردہ اوورسیز کمیشن پنجاب کو بھی قبضہ مافیا کے خلاف درخواست دی مگر تسلی کے سوا کچھ نہیں ملا، اوورسیز پاکستانی کمیشن سے مایوس ہوکر عدالت سے رجوع کیا گیا جس پر عدالت نے برکی پولیس کو مقدمہ درج کرنے کاحکم دیا مگر پولیس مقدمہ درج نہیں کر رہی کیونکہ لاہور پولیس کے اعلی افسران قبضہ مافیا کی پشت پناہی کر رہے ہیں اور قبضہ مافیا کا مسلم لیگ نواز سے بھی تعلق ہے، انہوں نے استدعاکی کہ قبضہ مافیا کے خلاف مقدمہ درج کرنے اور جائیداد واگزار کرانے کا حکم دیاجائے، عدالت نے ایس ایچ او برکی کو 17ستمبر کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے اور مقدمے کی نقل پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر