بجلی کی پیداوار میں کمی، شارٹ فال چھ ہزار میگاواٹ سے تجاوزکرگیا

بجلی کی پیداوار میں کمی، شارٹ فال چھ ہزار میگاواٹ سے تجاوزکرگیا

لاہور ( کامرس رپورٹر )ملک میں بجلی کی پیداوار میں کمی کے باعث شارٹ فال ایک بار پھر بڑھ کر ساڑھے چھ ہزار میگاواٹ تک پہنچ گیا ۔ شارٹ فال میں اضافہ کا تمام بوجھ مرمت کے نام پر بجلی کی بندش پر ڈالا گیا ۔ تمام سب ڈویژنوں میں دو سے تین فیڈرز اٹھ سے دس گھنٹے تک بند رکھے گئے ۔ گزشتہ روز شہروں میں چھ سے آٹھ گھٹنے اور دیہی علاقوں میں بارہ گھنٹے تک کی لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔ دوسری جانب ارسا نے چند روز میں ڈیموں سے پانی کے اخراج میں کمی کا انتباہ دے دیا ہے ۔ ارسا کے مطابق ڈیموں سے زیادہ اخراج کے باعث ڈیموں میں پانی کی تیزی سے کمی ہو رہی ہے تربیلا کے ذخیرہ میں یومیہ ڈھائی فٹ کمی جبکہ منگلا کے ذخیرہ میں یومیہ ایک فٹ کی کمی ہو رہی ہے ارسا نے صوبوں کا ہنگامی اجلاس طلب کر لیا ہے ۔ جس میں پانی کے اخراج میں کمی کا فیصلہ کیا جائے گا ۔ پانی کے اخراج میں کمی سے ہائیڈل کی پیداوار میں کمی ہو جائے گی جس سے شارٹ فال بڑھ جائے گا ۔ حکومت کی جانب سے پی ایس او کو ادائیگی کے لئے کوئی اقدامات نہیں کئے جا رہے ہیں جس کے باعث پی ایس او پاور پلانٹس کے مطلوبہ مقدار کے مقابلہ میں آدھا سے بھی کم تیل فراہم کر رہا ہے ۔ انرجی مینجمنٹ سیل کے ذرائع کے مطابق گزشتہ روز بجلی کی مجموعی ڈیمانڈ 19960 میگا واٹ جبکہ پیداوار 13470 میگا واٹ رہی ۔

مزید : صفحہ آخر