حکومتی احتساب کا آغاز سانحہ ماڈل ٹاؤن سے کیا جائے،طاہر القادری

حکومتی احتساب کا آغاز سانحہ ماڈل ٹاؤن سے کیا جائے،طاہر القادری

لاہور( نمائندہ خصوصی) عوامی تحریک کے قائد ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ ملکی کرپشن کی حالیہ داستانوں کے باعث بیرون ملک مقیم پاکستانی شدید پریشان اور ذہنی اذیت میں مبتلا ہیں حکمرانوں کے احتساب کا آغاز سانحہ ماڈل ٹاؤن کے کیس سے کیا جائے۔ وہ گزشتہ روز عوامی تحریک کے مرکزی سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈاپور اوراین اے 154سے پاکستان عوامی تحریک کے ٹکٹ ہولڈر عامر فرید کوریجہ سے ٹیلیفون پر گفتگو کر رہے تھے۔انہوں کہاکہ کرپشن ،بیڈ گورننس اور حکمرانوں کی نا اہلی سے جمہوری نظام کی جڑیں مضبوط نہیں ہوئیں ۔آج سات سال کے بعد بھی عوام بلدیاتی اداروں سے محروم ہیں ۔انہوں نے کہا کہ سٹیٹس کو کے حامی حکمران جب بھی اقتدار میں آتے ہیں لوٹ مار اور میگا کرپشن کی نئی داستانیں ساتھ لاتے ہیں۔ ان کا اقتدار اور سیاسی خمیر کرپشن سے اٹھا ہے ،انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کا کسانوں کیلئے نام نہاد پیکیج ضمنی انتخابات کے نتائج پر اثر انداز ہونے کی کوشش اور پری پول رگنگ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دھرنے کے آغازسے قبل سپریم کورٹ ،ہائیکورٹس اور ملک بھر کی ضلعی عدالتوں میں 17 لاکھ 93 ہزار سے زائد مقدمات زیرالتواء تھے ۔مقدمات کے التواء کی یہ رپورٹ موجودہ حکومت نے خود قومی اسمبلی میں پیش کی تھی ۔ان لاکھوں مقدمات کے التواء کا ذمہ دار کون تھا، اس کا تعین بھی ہو جانا چاہیے۔

مزید : صفحہ آخر