الیکشن کمیشن ضمنی اور بلدیاتی انتخابات کے دوران اخلاق پر عملدرآمد کرانے میں ناکام

الیکشن کمیشن ضمنی اور بلدیاتی انتخابات کے دوران اخلاق پر عملدرآمد کرانے میں ...

لاہور(محمد نواز سنگرا) الیکشن کمیشن آف پاکستان ضمنی اوربلدیاتی انتخابات کے دوران ضابطہ اخلاق پر عملدرآمد کرانے میں ناکام ہو گیا ہے۔ پنجاب میں ضمنی اور بلدیاتی الیکشن ترقیاتی فنڈ ز جا ری کئے جا رہے ہیں، الیکشن کمیشن کی طرف سے مقرر کردہ اخراجات سے امیدوار کئی گنا زیادہ رقم خرچ کر رہے ہیں ،افسران کے تقررو تبادلوں کے احکامات بھی جاری کیے جا رہے ہیں لیکن تاحال الیکشن کسی بھی خلاف ورزی کیخلاف میدان میں نہیں آیا اور نہ ہی کسی امیدوار کیخلاف کارروائی عمل میں لائی گئی ہے۔تفصیلات کیمطابق الیکشن کمیشن ضمنی اور بلدیاتی انتخابات میں ضابطہ اخلاق پر عمل درآمد کرانے میں ناکام ہو گیا ہے اور صوبائی بھر میں حکومتی ممبران اسمبلی کو بھاری مقدار میں فنڈز کا سلسلہ جاری ہے جس حوالے سے کچھ ارکان اسمبلی کو ترقیاتی فنڈز جاری کیے جا چکے ہیں تو دیگر نے بھی وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ میں ڈیرے ڈال لیے ہیں کہ ان کو فنڈز جاری کیے جائیں جو کہ بلدیاتی انتخابات جیتنے کیلئے سیاسی سٹنٹ کے طور پر لیے جا رہے ہیں ۔دوسری طرف وزیر اعلیٰ پنجاب نے الیکشن کمیشن کی طرف سے پابندی کے باوجود 3سیکرٹریوں اور2ڈی سی اوز سمیت متعدد افسران کو ان کو عہدوں سے ہٹایا لیکن الیکشن کمیشن کی طرف سے ایکشن میں آنے پر نوٹیفکیشن جاری نہ کیا گیا۔الیکشن کمیشن کی طرف سے جاری کردہ اخراجات سے کئی گنا زیادہ اخراجات کیے جا رہے ہیں جبکہ مجوزہ سائز سے بڑے فلیکس،پمفلٹ ،بینرز اور دیگر پرموشنل ٹولز بھی استعمال کیے جا رہے ہیں لیکن تاحال اس پر الیکشن کمیشن کی طرف سے ایکشن نہیں لیا گیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر