پہلی ششماہی کے دوران خلیجی ممالک کی کمپنیوں کے منافع میں 8 فیصد کمی

پہلی ششماہی کے دوران خلیجی ممالک کی کمپنیوں کے منافع میں 8 فیصد کمی

  

کویت سٹی(اے پی پی)رواں سال کی پہلی ششماہی کے دوران خلیجی ملکوں کی کمپنیوں کے منافع میں 8 فیصد کمی ہوئی جس کی وجہ تیل کے نرخوں میں کمی ہے۔کویت فنانشل مرکز کی جاری رپورٹ کے مطابق جنوری سے جون کے دوران 650 خلیجی کمپنیوں کا منافع 32.8 ارب ڈالر رہا جبکہ 2015 ء کے اسی عرصے میں 35.6 ارب ڈالر منافع ہوا تھا۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ ان تمام کمپنیوں کو منافع میں کمی کا سامنا رہا تاہم وہ کمپنیاں جو اومان سٹاک میں رجسٹر ہیں ان کے منافع میں 7 فیصد اضافہ ہوا۔گلف کارپوریشن کے رکن سٹاک ایکسچینجز گزشتہ سال اور رواں سال کے پہلے پانچ ماہ کے دوران تیل کی قیمتوں میں کمی کے باعث شدید متاثر ہوئے۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ جنوری سے جون کے دوران درمیانے اور چھوٹے درجے کی کمپنیوں کے منافع میں بالترتیب 38 فیصد اور 22 فیصد کمی ہوئی جبکہ بڑی کمپنیوں کے منافع میں کمی صرف 5 فیصد رہی۔

منافع میں کمی زیادہ تر اشیائے ضروریہ، جائیدادوں اور شعبہ تعمیرات میں ہوئی جبکہ بینکوں کی آمدنی فلیٹ رہی تاہم ٹیلی کمیونیکیشن اور مالیات کے شعبوں کی آمدنی میں اضافہ ہوا۔یاد رہے کہ گلف کارپوریشن کے رکن ملکوں میں بحرین، کویت ، اومان ، قطر، سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات شامل ہیں۔

مزید :

کامرس -