تنخواہوں میں غیر معمولی تاخیر سے پی آئی اے ملازمین معاشی مسائل سے دوچار

تنخواہوں میں غیر معمولی تاخیر سے پی آئی اے ملازمین معاشی مسائل سے دوچار

  

ملتان ( نیوز رپورٹر ) پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائن ( پی آئی اے ) انتظامیہ کی جانب سے اپنے ملازمین کے ساتھ دیگر وفاقی اداروں کے برعکس امتیازی روارکھا جارہا ہے پچھلے چار سالوں سے تنخواہوں نصف ماہ گزرنے کے باوجود ادائیگی نہیں کی جارہی تنخواہوں کے تاخیر سے ملنے کے باعث کو شدید مشکلات کا (بقیہ نمبر12صفحہ12پر )

سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ بیشتر ملازمین کے مطابق ملک کے تمام وفاقی اور صوبائی اداروں کے ملازمین کو مہینہ کے اختتام پر تنخواہیں وصول ہوجاتی ہیں لیکن پی آئی اے ملازمین کو تنخواہوں کا حصول روز بروز مزید تاخیر کا شکار ہوکر رہا گیا ہے انہوں نے کہا کہ پی آئی اے کے چھوٹے ملازمین کے گھروں میں تنخواہوں کی عدم دستیابی کے باعث چولہے ٹھنڈے ہوکر رہ گئے ہیں حکومت پی آئی اے ایمپلائز کے ساتھ دیگر اداروں کے ملازمین جیسا سلوک کرنے کے برعکس سلوک روارکھے ہوئے ہے انہوں نے مزید بتایا کہ پی آئی اے انتظامیہ اپنی ناقص پالیسیوں کا ملبہ چھوٹے ملازمین پر ڈالنے کے درپے ہے دنیا بھر کی ائیر لائنز میں نمایاں شناخت کی حامل ائیر لائن پی آئی اے کو موجودہ نہج پر لانے میں سفارشی افسران کی تحقیقاتی سمیت مالی خردبرد اور حکومتی ارکان کی بلا جواز مداخلت کارفرما رہی ہے انہوں نے بتایا کہ تمام وفاقی وصوبائی اداروں کے ملازمین کو پہلی تاریخ کو تنخواہیں موصول ہوجاتی ہیں جبکہ پی آئی اے ملازمین انتظامیہ کی اذیت میں مبتلا رہتے ہیں انہوں نے وزیراعظم پاکستان اور چیف جسٹس پاکستان سے استدعا کی ہے ملازمین کے اس جائز مسئلہ کو انسانی بنیادوں پر فوری حل کیا جائے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -