ملی یکجہتی اور اتحاد کے بانی ہیں‘ مشن جاری رکھیں گے‘ علامہ ساجد نقوی

ملی یکجہتی اور اتحاد کے بانی ہیں‘ مشن جاری رکھیں گے‘ علامہ ساجد نقوی

  

ملتان (سٹی رپورٹر)قائد ملت جعفریہ پاکستان اور اسلامی تحریک کے سربراہ علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاہے کہ ملک کو درپیش مسائل کے حل کیلئے بیانیہ علماء سے لینے کی بجائے ریاست(بقیہ نمبر42صفحہ12پر )

جاری کر ے ، ملک جس دہشت گردی ،انتہاء پسندی کی عفریت اور فرقہ واریت کا شکار ہے اس کا تعلق کسی طور پر مذہب یا مسلک سے نہیں ہے، مذہبی و مسلکی ہم آہنگی کی واضح اور بہترین مثال ملی یکجہتی کونسل کی صورت میں موجود ہے ، ملک میں کوئی شیعہ سنی مسئلہ نہیں ہے، وزیر داخلہ اس اہم نکتہ کی جانب توجہ دیں، ملی یکجہتی اور اتحاد کے بانی ہم ہیں ، اپنا یہ مشن جاری رکھیں گے کیونکہ اسی جذبے سے دہشت گردی و انتہا ء پسندی کو شکست دی جاسکتی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کے بیان پر ردعمل میں کیا۔ جاس میں انہوں نے کہا تھا کہ ’ انتہاء پسندی جنم دینے سے روکنے کیلئے متبادل بیانیہ اجاگر کرنا بنیادی مقصد ہے ۔علامہ ساجد نقوی نے کہاکہ ملک ایک عرصہ سے دہشت گردی، انتہاء پسندی کی عفریت اور فرقہ واریت کا شکار رہاہے ، آج بھی مختلف شعبوں میں اس کا سامنا کرنا پڑا رہاہے خصوصاً اعلیٰ تعلیمی درس گاہوں میں انتہا ء پسندوں کا انکشاف انتہائی تشویشناک ہے جبکہ اس سے یہ بھی ثابت ہوتا ہے کہ اس انتہاء پسندی کی عفریت اور فرقہ واریت کا مذہب یامسلک کا کوئی تعلق نہیں بلکہ یہی انتہاء پسندی ہی دہشت گردی کو بنیاد فراہم کررہی ہے جس سے نمٹنے کیلئے جرات مندانہ اور سنجیدہ اقدامات کی اشد ضرورت ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -