ہمارے دلائل نہیں مانے گئے ، عوام اور تاریخ ثابت کرے گی فیصلہ درست تھا یا نہیں : مسلم لیگ (ن)

ہمارے دلائل نہیں مانے گئے ، عوام اور تاریخ ثابت کرے گی فیصلہ درست تھا یا نہیں ...

  

اسلام آباد(اے این این)مسلم لیگ(ن) کے رہنماؤں کے رہنماؤں نے پانامہ کیس کے فیصلے کے خلاف نظرثانی کی درخواستیں مسترد کئے جانے کو افسوسناک قراردیتے ہوئے کہاہے کہ ہمارے دلائل نہیں مانے گئے، عوام اور تاریخ ثابت کرے گی کہ یہ فیصلہ درست تھا یا نہیں، نتائج کا اندازہ ہونے کے باوجود نظرثانی اپیل میں گئے ، نہ تو ہماری قیادت گاڈ فادرہے اور نہ ہی ہمارا مافیا سے کوئی لینا دینا ہے اس لئے عدالتی ریمارکس اور ہرزہ سرائی جیسے الفاظ کو مسترد کرتے ہیں ، کرپشن کے نام پر یکطرفہ روڈ رولر چلا یا جا رہا ہے، دہشت گردوں کو بھی اپیل کا حق ملتا ہے لیکن سابق وزیراعظم کو نہیں ملا اور اس کے بغیر ہی نااہلی ہوگئی ، حکومت بہت جلد آئین کے آرٹیکل 184/3 میں ترمیم کا بل منظور کرے گی ، قربانیوں کا سلسلہ جاری رہے گا اور ایک وقت آئے گا جب عدالتیں انصاف کریں گی۔اسلام آبادمیں میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ انصاف کے لیے نظر ثانی کی اپیل دائر کی تاہم انصاف کی امید کے باجود نتائج کا اندزہ تھا، پاناما کیس میں یہ جانتے ہوئے کہ جن فاضل جج صاحبان نے فیصلہ سنا یا وہ ہی نظر ثانی کی اپیل پر بھی سماعت کریں گے ۔سعد رفیق نے کہا کہ جو ریمارکس پھر دیے گئے یہ نامناسب ہیں اور ہم ہرزہ سرائی جیسے الفاظ کو مسترد کرتے ہیں ۔ وزیرمملکت برائے داخلہ امور طلال چودھری نے کہا ہے کہ ہماری نظر ثانی کی اپیل پر نظر ثانی ہوئی ہی نہیں ،ہمارا کیس تھا کہ ہمیں ٹرائل کے بعد کوئی سزا دی جائے اور اپیل کا حق ہونا چاہیے۔ انوشہ رحمان نے کہا کہ ہمارے خلاف فیصلہ دینے والے ہی نیب کے مانیٹرنگ جج مقرر ہوئے۔ ٹرائل کورٹ میں جب کیس چلے گا تو ہم آپکے سامنے چیزیں لاتے رہیں گے۔ مسلم لیگ( ن) کے رہنما بیرسٹر ظفراللہ نے کہا ہے کہ حکومت بہت جلد آئین کے آرٹیکل 184/3 میں ترمیم کا بل منظور کرے گی ، قربانیوں کا سلسلہ جاری رہے گا اور ایک وقت آئے گا جب عدالتیں انصاف کریں گی۔

مسلم لیگ(ن)

مزید :

صفحہ اول -