کراچی، خواجہ اظہار پرفائرنگ کرنیوالا انصار الشریعہ کا اہم کارندہ گرفتار

کراچی، خواجہ اظہار پرفائرنگ کرنیوالا انصار الشریعہ کا اہم کارندہ گرفتار

  

کراچی(این این آئی) حساس اداروں نے کراچی میں کامیاب کارروائی کے دوران انصار الشریعہ کے اہم کارندے کو پکڑ لیاہے، گرفتاردہشت گرد کنیز فاطمہ سوسائٹی میں سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خواجہ اظہار پرفائرنگ کے بعد فرار ہوگیا تھا۔دوسری جانب کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ کراچی راجہ عمرخطاب نے کہاہے کہ انصار الشریعہ میں شامل زیادہ تر دہشتگرد الیکٹریکل انجینئرزہیں،تفصیلات کے مطابق حساس اداروں نے کراچی کے علاقے سپر ہائی وے پرکارروائی کرکے انصار الشریعہ کے اہم کارندے محمد طلحہ کو گرفتار کرلیاہے۔ گرفتاردہشت گرد کنیز فاطمہ سوسائٹی میں سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خواجہ اظہار پرفائرنگ کے بعد فرار ہوگیا تھا۔پولیس کے مطابق ملزم طلحہ کنیز فاطمہ سوسائٹی کے مقدمے میں نامزد ہے، ملزم طلحہ فرار دہشت گرد مزمل کا بھائی ہے، کنیز فاطمہ سوسائٹی میں مقابلے کے بعد مزمل، طلحہ اور سروش فرار ہوئے تھے۔دوسری جانب انچارج کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ کراچی راجہ عمرخطاب نے کہاہے کہ انصار الشریعہ میں شاہ زیادہ تر دہشت گرد الیکٹریکل انجینئرزہیں۔سانحہ صفورا میں ملوث سعدعزیزبھی ایک اسکالر سے ملنے کے بعد شدت پسند بنا۔ انہوں نے کہاکہ ایم کیو ایم رہنما خواجہ اظہارالحسن پر حملے میں ملوث دہشتگرد حسان کے اہل خانہ اس کی سرگرمیوں سے واقف تھے۔

گرفتار

مزید :

کراچی صفحہ اول -