میانمار میں مسلمانوں کی نسل کشی اور وحشیانہ جرائم کے نا قابل تردید ثبوت موجود ،نذر آتش کئے جانے والے علاقوں کی تصاویر جاری کر دیں:ایمنسٹی انٹر نیشنل

میانمار میں مسلمانوں کی نسل کشی اور وحشیانہ جرائم کے نا قابل تردید ثبوت ...
میانمار میں مسلمانوں کی نسل کشی اور وحشیانہ جرائم کے نا قابل تردید ثبوت موجود ،نذر آتش کئے جانے والے علاقوں کی تصاویر جاری کر دیں:ایمنسٹی انٹر نیشنل

  

لندن(ڈیلی پاکستان آن لائن)انسانی حقوق کی عالمی تنظیم ’’ ایمنسٹی انٹرنیشنل ‘‘نے میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کے خلاف برما کی فوج اور بدھسٹ دہشت گردوں کے وحشیانہ جرائم کو نسل کشی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایسے ناقابل انکار شواہد اور ثبوت موجود ہیں جن سے پتہ چلتا ہے کہ میانمار کی فوج اور سیکیورٹی اہلکاروں نے راخین صوبہ کے کچھ علاقوں کو نذر آتش کیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق ’’ ایمنسٹی انٹرنیشنل ‘‘کی سینئر عہدیدار تیرانا حسن نے کہا کہ ایسے ناقابل انکار شواہد اور ثبوت موجود ہیں جن سے پتہ چلتا ہے کہ میانمار کی فوج اور سیکورٹی اہلکاروں نے راخین صوبہ کے کچھ علاقوں کو نذر آتش کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کے خلاف منصوبہ بند طریقہ سے انجام دیا جانے والا یہ اقدام ہے۔ دوسری طرف، ایمنسٹی انٹرنیشنل نے سیٹیلائٹ سے حاصل ہونے والی ایسی تصویریں نشر کی ہیں جن سے روہنگیا عوام کے دیہاتوں کو نذر آتش کرنے کے اقدام سے میانمار فوج کی انسانیت دشمن اقدام کا پتہ چلتا ہے۔سیٹیلائٹ سے حاصل ان تصویروں میں صاف طور پر دیکھا جا سکتا ہے کہ کس طرح میانمار کی دہشت گرد فوج اور بدھسٹ روہنگیا مسلمانوں کے خلاف وحشیانہ جرائم سر انجام دے رہے ہیں جبکہ میانمار کی جمہوری حکومت اور فوج راخین میں عالمی امدادی ایجنسیوں کو متاثرین تک رسائی دینے سے روک رہی ہیں۔

مزید :

انسانی حقوق -