کرپشن پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ ہے، سیاستدان کرپٹ ہوں گے تو ملک ترقی نہیں کرے گا، عمران خان

کرپشن پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ ہے، سیاستدان کرپٹ ہوں گے تو ملک ترقی نہیں ...
کرپشن پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ ہے، سیاستدان کرپٹ ہوں گے تو ملک ترقی نہیں کرے گا، عمران خان

  

خوشاب (ڈیلی پاکستان آن لائن) چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ بد عنوانی ہے، اگر سیاستدان کرپٹ ہوں گے تو ملک کبھی ترقی نہیں کرے گا۔

مودی حکومت کو اقتدار میں آئے ہوئے 3برس ہوگئے ،ملک کی معیشت مسلسل نیچے گئی ہے : آر ایس ایس

تفصیلات کے مطابق خوشاب میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے سربراہ عمران خان نے کرپٹ حکمرانوں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔ عمران خان نے کہا کہ کرپشن میں ملک کا پیسہ چوری ہوتا ہے، یہ ملک کو دیمک کی طرح کھا جاتی ہے، کرپشن کے خاتمے تک نوجوان بے روزگار رہیں گے اور ملک ترقی نہیں کرے گا۔چھوٹے سے حکمران طبقے نے کرپشن کر کے ملک کو تباہ کر دیا ہے،آپ کے پیسے سے یہ لوگ عیاشیاں کرتے ہیں، ساری قوم کو مقروض کر دیا ہے۔عوام کا پیسہ منی لانڈرنگ کے زریعے ملک سے باہر بھیجا جا تا ہے، اس سے ملک کو دوگنا نقصان ہوتا ہے کیونکہ آئی ایم ایف سے قرضہ لینا پڑتا ہے اور عوام پر ٹیکس کی مد میں اضافی بوجھ ڈال دیا جاتا ہے، قوم غریب ہو جاتی ہے۔

تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کا کہنا تھا کہ ابھی پاناما کاانکشاف بھی نہیں ہوا تھا کہ مریم نواز کہتی ہیں کہ لندن تو کیا پاکستان میں بھی میرے نام کوئی پراپرٹی نہیں ہے، جبکہ مریم بی بی کے بھائی کہتی ہیں کہ الحمداللہ فلیٹس ہمارے ہیں۔ تو آخر مریم بی بی کو جھوٹ بولنے کی ضرورت کیوں پڑی ؟ کیونکہ یہ پیسہ عوام کا تھا، جو انہوں نے چوری کیا، اگر شریف خاندان کا پیسہ حلال کا ہوتا تو مریم نواز کو جھوٹ نہ بولنا پڑتا۔

عمران خان نے این اے 120کے ضمنی الیکشن کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کل لاہور میں ایک زبردست میچ ہونے والا ہے، ایک طرف وفاقی حکومت اور پنجاب کی حکومت کے سارے وسائل اور مریم بی بی ہیں،، جبکہ دوسری طرف پی ٹی آئی کی امیدوار ڈاکٹر یاسمین راشد ہیں۔ جم کے الیکشن ہو گا، میں لاہور میں بڑا ہوا ہوں، اپنے لاہوریوں کو جانتا ہوں، کل لاہور میں آتش با زی ہو گئی۔ الیکشن میں لاہور کے لوگ فیصلہ کریں گے کہ عدلیہ کے ساتھ کھڑے ہیںیا ملک کے سب سے بڑے ڈاکوﺅں کے ساتھ۔مریم بی بی سے پوچھیں کہ 30سال میں 6بار پنجاب ان کے پاس تھا اور وہ ایک بھی ایسا اسپتال نہیں بنا سکے جہاں بیگم کلثوم نواز کا علاج ہو سکے۔ اگر ن لیگ والے آپ کو ووٹ کے بدلے پیسے بھی دیں تو میں کہتا ہوں کہ ان سے پیسے لے لینا اور ووٹ بلے کو ہی دینا۔

پاکستان کی قومی اسمبلی میں ملک کے بڑے ڈاکو، قبضہ گروپ ، اور عوام کے قاتل بیٹھے ہیں جبکہ سائیکل چور جیلوں میں سڑ رہے ہیں۔اصل چور حکمرانی کر رہے ہیں، جس کا ایک بیٹا 600کروڑ کے گھر کا مالک ہے ،دوسرا بیٹا اربوں پتی ہے، اور بیٹی کے لندن کے سب سے مہنگے علاقے میں محلات ہیں۔نواز شریف کہتے ہیں کہ مجھے کیوں نکالا ؟ ان سے یہ پوچھو کہ ان بیچارے لوگوں کا کیا قصور ہیں جو جیلوں میں بے قصور سڑ رہے ہیں۔

پی ٹی آئی چیئرمین نے ملکی حالات کے بارے میں جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا ملک میں لاکھوں بچے گندے پانی کی وجہ سے مر رہے ہیں، نوجوان بے روز گار ہیں، ڈھائی کروڑ بچے سکولوں سے دور ہیں، ان کا مستقبل تباہ ہو رہا ہے، عورتوں کو بنیا دی سہولتیں میسر نہیں ہیں، اور ملک کے حکمران تحفے میں BMWدیتے ہیں، بریف کیس دے کر ججوں کو خریدتے ہیں، الیکشن کمیشن میں لوگوں کو خریدا جاتا ہے،اداروں کا مستقبل تبا ہ کر چکے ہیں۔ ہم نے خیبر پختونخوا میں اعلی مثال قائم کی ہے، پولیس کو رشوت نہیں دینی پڑتی، پٹواریوں سے پیسہ دے کر کام نہیں نکلوانا پڑتا، کے پی کے میں 5گنا غربت کم ہوئی ہے، پنجاب اور سندھ کی پولیس ٹھیک کر کے دکھاﺅں گا، میں نے مغرب کا نظام دیکھا ہے، پاکستان میں ایک نیا دور آنے والا ہے۔ہم اسلامی فلاحی ریاست کا خواب شرمندہ تعبیر کریں گے، ساری پالیسیاں غربت کو ختم کرنے کیلیے بنائیں گے، ٹیکس کا منصفانہ نظام لائیں گے، غربت ختم ہو گی تو ملک ترقی کرے گا۔

عمران خان نے خوشاب کے لوگوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ میں خوشاب کے لوگوں کے تما م مسائل جانتا ہوں۔ دنیا بھر کی حکومتیں کسانوں کیلیے آسانیاں پیدا کرتی ہیں۔ شکر ہے 21سالوں بعد قوم کی میری بات کی سمجھ آگئی ہے۔سنگا پور کے ایماندار وزیر اعظم نے سب سے پہلے کرپشن پر قابو پایا، اپنے تین وزیروں کو جیل بھجوا دیا، آج سنگا پور پاکستان کے مقا بلے 520ارب ڈالرزکی ایکسپورٹس کرتا ہے جبکہ پاکستان صرف 16ارب ڈالرز کی برآمدات کرتا ہے۔

مزید :

قومی -