جنگ شروع ایشیا کا ’’دادا‘‘ کون؟؟

جنگ شروع ایشیا کا ’’دادا‘‘ کون؟؟

ایشیاء کپ کرکٹ ٹورنامنٹ زور و شور سے شروع ہو گیا،جس میں ایشیاء کی چھ ٹیمیں شرکت کر رہی ہیں جن میں پاکستان، بھارت، سری لنکا، بنگلہ دیش، ہانگ کانگ،افغانستان کی ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں ایونٹ میں بھارتی ٹیم اپنے اعزازا کا دفاع کر رہی ہے پاکستان کرکٹ ٹیم آج ایونٹ میں اپنا پہلا میچ ہانگ کانگ کے خلاف میدان میں اترے گی ۔ایشیا کپ کے لئے قومی ٹیم سرفراز احمد، فخر زمان، بابراعظم، آصف علی، امام الحق، شعیب ملک، شان مسعود، حارث سہیل، فہیم اشرف، حسن علی، محمد عامر، شاداب خان، محمد نواز، جنید خان، عثمان شنواری اور شاہین آفریدی شامل ہیں۔ ایونٹ کا سب سے بڑا ٹاکرا 19 ستمبر کو پاکستان اور بھارت کے درمیان کھیلا جائے گا۔آج کھیلے جانے والے میچ میں پاکستان کی کرکٹ ٹیم جیت کے لئے فیورٹ ہے اور ہانگ کانگ کی ٹیم اس کے مقابلے میں بہت کمزور ہے اب دیکھنا یہ ہے کہ پاکستان کی ٹیم اس کے خلاف کتنے بڑے مارجن سے کامیابی حاصل کرتی ہے،جبکہ اصل مقابلہ پاکستان اور بھارت کی ٹیموں کے درمیان ہوگا جس کا شائقین کرکٹ کوشدت سے انتظار ہے ۔ اس سے قبل پاکستان اور بھارت کی کرکٹ ٹیمیں چیمپئنز ٹرافی کے فائنل میں ایک دوسرے کے مدمقابل آئیں۔ جس میں پاکستان نے بھارت کے خلاف کامیابی حاصل کی تھی ۔ پاکستان کو بھارت کے خلاف نفسیاتی برتری حاصل ہوگی۔پاکستان کرکٹ ٹیم کپتان سرفراز احمد کی قیادت میں جبکہ بھارت کی ٹیم روہت شرما کی قیادت میں میدان میں اُترے گی اس میچ میں بھارت کو اپنے سینئر کھلاڑی اور کپتان ویرات کوہلی کی خدمات حاصل نہیں ہوں گی اور اب دیکھنا یہ ہے کہ ان کے بغیر کس طرح سے اس میچ میں بھارت کی ٹیم پرفارمنس دیتی ہے اس اہم میچ میں کوہلی کے میچ میں شرکت نہ کرنے سے کہا جارہا ہے کہ اس کا بھی پاکستانی ٹیم کو ضرور فائدہ حاصل ہوگا ایشیاء کپ میں کامیابی کے لئے کون سی ٹیم فیورٹ ہے۔یہ کہنا بھی قبل از وقت ہے کیونکہ اس ایونٹ میں پاکستان اور بھارت کی ٹیموں کے علاوہ سری لنکا کی ٹیم بھی شامل ہے اور یہ ٹیمیں کئی مرتبہ اس ایونٹ کو اپنے نام کرنے میں کامیاب ہوچکی ہیں جبکہ بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم بھی کسی سے پیچھے نہیں ہے اور اس وقت وہ بھی مکمل فارم میں نظر آرہی ہے پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد سمیت تمام کھلاڑی پُرعزم ہیں کہ وہ اس میچ میں بھارت کے خلاف کامیابی حاصل کریں گے اور اس کے لئے تمام کھلاڑیوں نے بہت محنت کی ہے اور ہم سب کی محنت ضرور رنگ لے کر آئے گی ۔پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا ہے کہ ایشیا کپ میں ر وایتی حریف کے خلاف میچ میں پوری تیاری کے ساتھ میدان میں اتریں گے۔ ایشیا کپ سے پاکستانی ٹیم کے لئے ورلڈکپ کے سفر کا آغاز ہوجائے گا۔ پاکستانی ٹیم میں تجربہ کار آل راؤنڈر محمد حفیظ کی ضرورت ہے اور وہ ہمار ے پاکستان کے ورلڈ کپ پلان کا حصہ ہیں،جہاں بھی ضرورت ہوئی،ان کو شامل کریں گے۔ امید ہے محمد حفیظ ورلڈکپ کے لئے دستیاب ہوں گے۔ ایشیا کپ بڑا ایونٹ ہے ساری ٹاپ ٹیمیں کھیل رہی ہیں، تاہم بھرپور کارکردگی دکھانے کی کوشش کریں گے۔ سرفراز احمد نے واضح کیا کہ تمام ٹیمیں ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کو ہی ترجیح دیں گی، تاہم ان کی کوشش ہوگی کہ وہ اپنے سپنرز کو موثر بنانے کی کوشش کریں گے۔ اسپنرز کا کردار اہم ہوگا۔ متحدہ عرب امارات کی پچز سلو ہوتی ہیں، کنڈیشنز کو پیش نظر رکھتے ہوئے ہی ٹیم پلان بنائیں گے۔ پاکستانی ٹیم کا مورال بلند ہے اور اچھا پرفارم کریں گے۔ کپتان کا کہنا تھا کہ متحدہ عرب امارات میں پہلے بیٹنگ کی تو 300 سے زائد رنز کرنے کی کوشش کریں گے، ہماری بولنگ 300 رنز سے زائد کے ہدف کا دفاع کرسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ میگا ایونٹ کے لئے تمام ٹیموں نے مضبوط اسکواڈز منتخب کیے ہیں، افغانستان سمیت کسی کو بھی کمزور سمجھنے کی غلطی نہیں کر سکتے۔ غیر ملکی کوچز کی رہنمائی میں قومی کرکٹرز کی فٹنس میں نمایاں بہتری آئی ہے، ورلڈ کپ سے قبل گرین شرٹس کی کافی مصروفیات ہیں، تیاریوں کے لئے زیادہ وقت باقی نہیں۔ ایشیا کپ کے لئے کیمپ میں گرم موسم کے باوجود کھلاڑیوں نے سخت محنت کی، کوشش کریں گے کہ تینوں شعبوں میں اچھا پرفارم کریں۔ بھارت کے خلاف میچ بہت اہم ہے اور یہ میچ ٹورنامنٹ کا پہلا میچ ہوگا۔ سرفراز احمد نے کہا کہ کسی ایک شعبے پر انحصار نہیں، تمام شعبوں میں بھرپور محنت کریں گے، ٹیم میں کافی چیزیں بہتر ہوئی ہیں اور بیٹنگ لائن ہدف حاصل کرنے کی قابلیت رکھتی ہے۔ سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ پاکستان اے ٹیم بھی سیریز کھیلنے کے لئے دبئی میں ہی ہوگی اگر ایشیا کپ میں متبادل کھلاڑی کی ضرورت ہوئی تو وہاں سے ہی بلا سکتے ہیں۔یو اے ای میں موسم گرم ہے، رات میں ہوا میں نمی کا تناسب زیادہ ہوتا ہے اور رات کے وقت جلد فلڈ لائٹس آن ہوتی ہیں توبیٹنگ تھوڑی مشکل ضرور ہوگی۔ جبکہ دوسری جانبعمران خان سے چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈاحسان مانی نے ملاقات کی‘جس میں پاکستان کرکٹ بورڈ کو چلانے اور ٹیلنٹ کو سامنے لانے پر بات چیت کی گئی۔ وزیراعظم عمران خان سے چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ احسان مانی نے وزیراعظم ہاوس میں ملاقات کی،جس میں چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈحسان مانی نے وزیراعظم کو گزشتہ 10برسوں میں بورڈ کی کارکردگی سے متعلق تفصیلی بریف کیا۔ وزیراعظم عمران خان نے نو منتخب چیئرمین پی سی بی احسان مانی پر اطمینا ن کا اظہار کیا اور فرسٹ کلاس کرکٹ ڈھانچے کو بہتر بنانے کی ہدایت کی،جبکہ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے نئی ٹیسٹ رینکنگ جاری کر دی ہے، جس کے مطابق بھارت پہلے جبکہ پاکستان کی سا تویں پوزیشن برقرار ہے۔ انگلینڈ کے ہاتھوں بھارت کوشرمناک شکست کے بعد آئی سی سی نے نئی ٹیسٹ رینکنگ جار ی کر دی جس کے مطابق ٹاپ 10ٹیموں میں بھارت 115پوائنٹس کے ساتھ پہلے ساوتھ افریقہ اور آسٹریلیا 106 پوائنٹس کے ساتھ دوسرے تیسرے جبکہ سیریز جیتنے کے بعد انگلینڈ نے نیوزی لینڈ سے چوتھی پوزیشن چھین لی،انگلینڈ 105کے ساتھ چوتھے، جبکہ 102 پوائنٹس کے ساتھ نیوزی لینڈ پانچویں نمبر پر موجود ہے۔سری لنکن ٹیم 97پوائنٹس کے ساتھ چھٹے، جبکہ پاکستان ٹیم 88پوائنٹس کے ساتھ ساتویں پوزیشن پر ہے،ویسٹ انڈیز 77،بنگلہ دیش67جبکہ زمبابوے 2پوائنٹس کے ساتھ بالترتیب آٹھویں، نویں اور دسویں نمبر پر موجود ہیں۔دوسری جانب پلیئرز رینکنگ میں سابق برطانوی کپتان اور اوپننگ بلے باز ایلسٹر کک نے اپنے آخری انٹر نیشنل میچ میں مین آف دی میچ ایوارڈ اپنے نام کرنے کے ساتھ نئی آئی سی سی ٹیسٹ رینکنگ میں 10ویں بہترین بلے باز کی حیثیت سے کیریئر کا اختتام کیا ہے۔برطانوی ٹیسٹ کپتان جوئے روٹ نے اوول ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں 125 رنز سکور کرکے پانچویں سے چوتھی پوزیشن پر چھلانگ لگائی ہے جب کہ جوز بٹلر نے 32ویں سے 23اور آل رانڈر معین علی نے 48ویں سے 43ویں پوزیشن پر قبضہ جما لیا ہے۔انگلش فاسٹ بالر جیمز اینڈرسن نے سیریز کا آغاز اور اختتام بہترین ٹیسٹ بالر کی حیثیت سے کیا اور لارڈز ٹیسٹ کے بعد انہوں نے 900پوائنٹس کا سنگ میل بھی عبور کیا تھا ، جیمز اینڈرسن نے 892 پوائنٹس کے ساتھ سیریز کا آغاز کیا تھا اور اختتام 899پوائنٹس کے ساتھ کیا ہے ،بالنگ رینکنگ میں ترقی پانے والے دیگر کھلاڑیوں میں بین سٹوکس (28ویں سے 27ویں پوزیشن )،عادل رشید(50ویں سے44ویں پوزیشن)اور سیم کیرن (55ویں سے1 5ویں پوزیشن شامل ہیں جنہوں نے میچ میں 3،3وکٹیں حاصل کیں۔

*****

مزید : ایڈیشن 1