یو ایس اوپن2018ء نووک مینز اورنومی اوسکا ویمنز ٹائٹل لے اڑی

یو ایس اوپن2018ء نووک مینز اورنومی اوسکا ویمنز ٹائٹل لے اڑی

138 واںیوایس اوپن ٹینس ٹورنامنٹ کا مینز مقابلہ سربیا کے ٹینس سٹار نووک جانکوچ نے اپنے نام کر لیا۔انہوں نے سال کے اس اہم ایونٹ کے فائنل معرکہ میں اپنے حریف ڈیل پورٹو کو شکست سے دوچار کیا اور کامیابی کاسہرا اپنے سر سجایا انہوں نے یہ مقابلہ6-3 7-6 اور 6-3 سے اپنے نام کیا اور اس میچ میں نووک کو ہی جیت کے لئے فیورٹ قرار دیا جارہا تھا،کیونکہ ان کے مدمقابل کھلاڑی ان کے مقابلہ میں بہت کم تجربہ کار تھا اس کے باوجود انہوں نے اس میچ میں بہت اچھی پرفارمنس کا مظاہرہ کیا اور اچھی بات یہ ہے کہ اس نوجوان کھلاڑی نے نووک کے خلاف حیران کن کھیل پیش کیا اس میچ میں کامیابی کے ساتھ ہی نووک نے اس ایونٹ میں اپنی ایک اور کامیابی میں اضافہ بھی کیا اور اس حوالے سے انہوں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس میچ میں بہت محنت سے کھیل پیش کیا اور یو ایس اوپن کے لئے مَیں نے ہمیشہ ہی بہت محنت کی ہے اور خوشی اس بات کی ہے کہ مَیں نے یہ ٹائٹل اپنے نام کیا ہے اس کی ایک وجہ یہ بھی ہے کہ یہ ایک بہت بڑا ایونٹ ہے جس کو ہر کھلاڑی جیتنے کی خواہش رکھتا ہے امید ہے کہ میں اسی طرح سے اپنے کھیل میں مزید نکھا ر لانے کی کوشش کروں گا اور میری محنت رنگ لیکر آئے گی اورجس طرح سے مَیں نے اس میچ میں حریف کو شکست دی اسی طر ح سے میں محنت کا یہ سلسلہ جاری رکھوں گا اس موقع پر رنر اپ کھلاڑی نے کہا کہ میں نے جیت کی کوشش کی، مگر میں جانتا تھا کہ میں ایک بہت بڑے کھلاڑی کے ساتھ مقابلہ کررہا ہوں اور میں نووک کو ان کی اس شاندار جیت پر مبارکباد دیتا ہوں ان کے ساتھ اس میچ میں شرکت سے مجھے بہت سیکھنے کو ملا ہے جو مستقبل میں میرے کام آئے گا میں نے ہمیشہ ہی اپنی غلطیوں سے سبق سیکھا ہے اور اسی طرح سے میں نے آگے بڑھنا ہے اور میں مستقبل میں مزید محنت سے کھیل پیش کرنے کی کوشش کروں گا دوسری جانب ویمنز ایونٹ کی بات کی جائے تو اس ایونٹ کا اب تک کا سب سے بڑا اپ سیٹ دیکھنے میں آیا جب امریکہ سے ہی تعلق رکھنے والی میزبان کھلاڑی اور دنیا کی مایہ ناز ٹینس سٹار سرینا ولیمز کو ایک جونیئر ٹینس سٹار سے شکست کا سامنا کرنا پڑا اور اس شکست پر شائقین بھی حیران رہ گئے کہ ایک اتنی بڑی سٹار کھلاڑی اپنے ہی ملک میں کس طرح سے ایک جونئر کھلاڑی سے شکست کھاگئی سرینا ولیمز کو یو ایس اوپن کے فائنل میں نومی اوسکا نے شکست سے دوچار کیا جنہوں نے اس سے قبل کبھی بھی اتنی بڑی کامیابی اپنے نام نہیں کی تھی اور اس کی ان کو جتنی خوشی تھی وہ قابل دید تھی اور دوسری طرف سرینا ولیمز کو جیسے ہی شکست ہوئی وہ آگ بگولہ ہوگئی اور جس طرح سے انہوں نے اس موقع پر بدتمیزی کی وہ بھی شائقین نے درست قرار نہیں دی اس موقع پر انہوں نے اپنا ریکٹ بھی توڑدیا جس پر ریفری نے ان کے خلاف سخت کارروائی کرتے ہوئے ان کو جرمانہ بھی عائد کیااس موقع پر فاتح کھلاڑی نومی اوسکا نے بھرپور خوشی کاا ظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں نے اس میچ میں سوچا بھی نہ تھا کہ میں کامیابی حاصل کروں گی، لیکن میں نے اس میچ میں بہت محنت سے کھیل پیش کیا ہے اور مجھے اس بات کی بہت زیادہ خوشی ہے کہ مَیں نے سرینا ولیمز کے خلاف کامیابی حاصل کی جن کے خلاف جیت کا میں کبھی سوچ بھی نہیں سکتی تھی میں ان کی بہت بڑی پرستار فین ہوں اور اس جیت کو میں ہمیشہ ہی یاد رکھوں گی اور اس جیت سے مجھے جو حوصلہ ملا ہے وہ بھی میرے مستقبل میں بہت کام آئے گا اور میں اسی طرح سے مزید محنت کرکے اسی طرح سے تاریخی کامیابیاں حاصل کروں گی اور میں یو ایس اوپن میں اپنے پرستاروں کی جانب سے ملنے والی محبت کا بھی ان سے اظہار تشکر کرتی ہوں، جنہوں نے میچز کے دوران میری جس طرح سے بھرپور حوصلہ افزائی کی میری جیت میں ان کا بھی بہت ہاتھ ہے اور میں یہ سلسلہ اسی طرح سے کوشش کروں گی کہ مستقبل میں بھی جاری رکھوں اور سرینا ولیمز کے ساتھ اس میچ میں جتنا مجھے سیکھنے کوملا ہے میں یقین رکھتی ہوں کہ مستقبل میں وہ میرے بہت کام آئے گا اور میں ان کی بھی بہت شکرگزارہوں کہ مجھے ان کے ساتھ کھیلنے کا موقع ملا ہے اور اس جیت پر بہت زیادہ خوشی محسوس کررہی ہوں۔

*****

مزید : ایڈیشن 1