صدر مملکت کی مزار قائد پر حاضری پروٹوکول کے باعث سڑک ٹریفک کیلئے بند ، عوام پریشان

صدر مملکت کی مزار قائد پر حاضری پروٹوکول کے باعث سڑک ٹریفک کیلئے بند ، عوام ...

کراچی ( آن لائن ،این این آئی،آئی این پی) صدرِ مملکت ڈاکٹر عارف علوی عہدہ سنبھالنے کے بعد پہلی مرتبہ مزارِ قائد پہنچے، پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی۔تفصیلات کے مطابق صدر عارف علوی کے قافلے میں شامل2 درجن سے زائد گاڑیوں کے پروٹوکول کے باعث سڑک ٹریفک کیلئے بند کردی گئی تھی اور شہریوں کو انتظار کرنا پڑا۔صدرِ مملکت کی آمد کے موقع پر مزارِ قائد کے اطراف سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے اور رینجرز اور پولیس کی بھاری نفری تعینات تھی۔دوسری جانبشہر قائد میں اپنے پروٹوکول کے حوالے سے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ ان کے منع کئے جانے کے باوجود پروٹوکول دیا گیا۔سوشل میڈیا پر شدید تنقید کے بعد صدر مملکت عارف علوی نے ٹویٹر پر وضاحت دی ہے جس میں انہوں نے کہا کہ یہ درست ہے کہ ان کے ہمراہ کئی گاڑیاں تھیں حالانکہ سرکاری حکام سے کہا تھا کہ مجھے عوام کے سامنے رسوا نہ کیجیے، میرے ساتھ سکیورٹی تناظر کی حد تک ہی گاڑیاں رکھی جائیں، ایک یا دو گاڑیاں آگے اور اتنی ہی پیچھے ہونی چاہئیں لیکن ایسا نہیں ہوسکا، ہمیں اس سلسلے میں سخت اقدام اٹھانا پڑیں گے۔صدر پاکستان کی کراچی آمد پر انہیں ملنے والے وی وی آئی پی پروٹوکول پر ان کے صاحبزادے عواب علوی نے بھی افسوس کا اظہار کیا۔انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائیٹ پر اپنے ایک ٹویٹ میں پروٹوکول کے باعث عوام کو پہنچنے والی تکلیف کی تصدیق کی اور افسوس کا اظہار کیا۔عواب علوی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹرپر جاری بیان میں کہا کہ صدر پاکستان کے پروٹوکول کو مزید کم کرنے کی ضرورت ہے اور ان کے والد اسی سلسلے میں بات چیت کر رہے ہیں۔

مزید : صفحہ اول