ہنگو ،چوروں کے سرگرم رہنے کی افواہیں دم توڑ گئیں

ہنگو ،چوروں کے سرگرم رہنے کی افواہیں دم توڑ گئیں

ہنگو(بیورورپورٹ)ٹل میں نامعلوم افراد کی جانب سے چوروں کے سرگرم رہنے کی افواہیں دم توڑ گئیں۔ایس ایچ او اور علاقائی مشران نے چوری کی وارداتوں کی افواہوں کو بے بنیاد اورمن گھڑت قرار دے دیا۔،علاقائی مشران کاٹل پولیس کی پیشہ ورانہ فرائض اورکارکردگی پرمکمل اعتمادکااظہار۔ چوروں کے سرگرم رہنے کے افواہیں پھیلانے والوں کے خلاف پولیس متحرک ، جگہ جگہ سرچ آپریشن کا آغاز کر دیا۔تفصیلات کے مطابق تھانہ ٹل میں تحصیل ٹل کے مشران اورپولیس کا مشترکہ اجلاس منعقدہواجس میں تحصیل ٹل کے مختلف شعبہ زندگی سے وابستہ بلدیاتی نمائندوں،کاروباری تنظیموں کے نمائندگان،علاقہ مشران معززین سمیت ایس ایچ او تھانہ ٹل جمشیدخان اوردیگرپولیس افسران و اہلکار بھی موجودتھے،اجلاس میں علاقہ مشران،بلدیاتی نمائندوں عمربنگش،محمدامین،حکیم خان،میکائیل خان،ملک جمیل خان،حاجی رازق شاہ،حاجی قاسم خان،ملک محمدشفیع،ضیاء الحق،پروفیسررحمن الدین،مسلم نورودیگرنے پولیس کومشترکہ تحریری اعتمادنامہ حوالہ کرتے ہوئے واضح کیا کہ ٹل سٹی میں چوری ورداتوں کے واقعات کی من گھڑت افواہیں سراسربے بنیادہے اورٹل پولیس نے ہمیشہ جرائم کی روک تھام اورعوام کے جان ومال کے تحفظ کیلئے قابل قدرخدمات انجام دیں۔مشران نے کہا کہ پولیس کے ساتھ مضبوط روابط استوارکرتے ہوئے شہراورعلاقہ جات میں پولیس کی سہولت کیلئے بالخصوص رات کے اوقات میں شہرکے محلہ جات اورگردونواح میں بلاوجہ گھومنے پھرنے پربھی پابندی عائدکردی گئی تھی اورٹل کے عوام نے تین دن پابندی میں تعاون کرکے پولیس پرمکمل اعتماد کا اظہارکیا۔انہوں نے کہا کہ عوام ہرگزجھوٹی افواہوں پرتوجہ نہ دیں۔ دریں اثنا ایس ایچ او ٹل جمشیدخان نے علاقہ مشران کے تعاون کاشکریہ اداکرتے ہوئے یقین دلایا کہ ڈی پی او ہنگوپیرشہاب علی کی زیرسرپرستی ڈی ایس پی ٹل شوکت علی شاہ کی قیادت میں ٹل پولیس عوام کے جان ومال کے تحفظ اورپائیدارامن کے فروغ سمیت جرائم پیشہ اورسماج دشمن عناصرکی حوصلہ شکنی کیلئے پرعزم اوربلندحوصلے کیساتھ ہرقربانی دینے سے دریغ نہیں کریں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر