کراچی ، فردوس شمیم کو نقوی کو مزار قائد میں داخلے سے روک دیا گیا

کراچی ، فردوس شمیم کو نقوی کو مزار قائد میں داخلے سے روک دیا گیا

کراچی(اسٹاف رپورٹر)صدرمملکت اورگورنرسندھ کے دیرینہ دوست فردوس شمیم نقوی صدرمملکت کے قافلے کے ہمراہ مزارقائد پرپہنچنے کی بجائے گھرسے براہ راست مزارقائد آنے پر ہفتے کوصدرمملکت کے ساتھ مزارقائد پرحاضری نہ دے سکے اورپروٹوکول سیکورٹی عملہ کی جانب سے مزارقائد احاطے میں داخلے کی اجازت نہ ملنے پرمایوس گھرروانہ ہوگئے۔سندھ اسمبلی میں نامزد اپوزیشن لیڈر اورپی ٹی آئی کراچی کے صدرفردوس شمیم نقوی مزارقائد تاخیر سے پہنچے صدرمملکت اورگورنرسندھ کی آمد کے بعد پہنچنے والے فردوس شمیم نقوی نے جب مزارقائد کے احاطے میں داخل ہونا چاہا تو انہیں اجازت نہ ملی ، فردوس شمیم نقوی نے سیکورٹی اہلکاروں سے اصرارکیا کہ میں سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور صدرمملکت کا دوست ہوں مگرسیکیورٹی اہلکاروں نے معذرت کا اظہارکرتے ہوئے فردوس شمیم نقوی سے کہاکہ صدرمملکت کی آمد کے بعد آپ مزارپر نہیں جاسکتے فردوس شمیم نقوی نے سیکیورٹی آفسرسے مکالمہ کیا کہ میں ڈاکٹرعارف علوی کی دعوت پر آیا ہوں مجھے مزارقائد پرجانے دیں جانیں دیں مگرسیکورٹی افسرنے ان کی ایک نہ سنی جب بات بڑھنے لگی تو سیکورٹی افسرنے فردوس شمیم نقوی سے کہاکہ آپ چاہیں توصدرصاحب سے ہماری شکایت کردیجیے گا مگرہم اپنے سیکورٹی ضابطہ اخلاق کے تحت آپ کو مزارقائد پرجانے کی اجازت نہیں دے سکتے جس کے بعد فردوس شمیم نقوی واپس روانہ ہوگئے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر