ماڈل کورٹس کے بعد سول نوعیت کے معاملات پرماڈل کورٹس بن رہی ہیں،قائم مقام چیف جسٹس مامون رشید

ماڈل کورٹس کے بعد سول نوعیت کے معاملات پرماڈل کورٹس بن رہی ہیں،قائم مقام چیف ...
ماڈل کورٹس کے بعد سول نوعیت کے معاملات پرماڈل کورٹس بن رہی ہیں،قائم مقام چیف جسٹس مامون رشید

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)قائم مقام چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس مامون رشید نے کہا ہے کہ تعلیم جج بننے سے ختم نہیں ہوتی،وہاں سے تعلیم کا سفر شروع ہوتا ہے،فوجداری مقدمات کیلئے ماڈل کورٹس کے بعد سول نوعیت کے معاملات پرماڈل کورٹس بن رہی ہیں، وسائل کی کمی کا سامنا ہے جسے جلد حل کرلیا جائے گا ، میڈیا رپورٹس کے مطابق قائم مقام چیف جسٹس مامون رشید نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جوڈیشل اکیڈمی میں ریسرچ سرکل قائم کیا جا رہا ہے ،برقت انصاف فراہمی کیلئے تربیتی کورس شروع کئے گئے ہیں جسٹس مامون الرشیدنے کہا کہ ضلعی عدلیہ میں مزید ججز کی ضرورت ہے ،انہوں نے کہا کہ تعلیم جج بننے سے ختم نہیں ہوتی،وہاں سے تعلیم کا سفر شروع ہوتا ہے،فوجداری مقدمات کیلئے ماڈل کورٹس کے بعد سول نوعیت کے معاملات پرماڈل کورٹس بن رہی ہیں، وسائل کی کمی کا سامنا ہے جسے جلد حل کرلیا جائے گا ،۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...