احتساب عدالت نے شاہد خاقان عباسی کو تایا کے نماز جنازہ میں شرکت کی مشروط اجازت دیدی

احتساب عدالت نے شاہد خاقان عباسی کو تایا کے نماز جنازہ میں شرکت کی مشروط ...
احتساب عدالت نے شاہد خاقان عباسی کو تایا کے نماز جنازہ میں شرکت کی مشروط اجازت دیدی

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی پیرول پر رہائی کی درخواست پر محفوظ فیصلہ سنا دیا ،عدالت نے شاہد خاقان عباسی کو تایا کے جنازہ میں شرکت کی مشروط اجازت دیدی،عدالت نے پیرول پر رہائی ضلعی انتظامیہ کی فول پروف سکیورٹی سے مشروط کر دی،عدالت نے کہا کہ سکیورٹی کی ذمے داری لیں تو ڈی جی نیب جنازے میں شرکت کی اجازت دیں ،جج نے ہدایت کی ڈجی جی نیب پیرول پر رہائی کے ضروری اقدامات مکمل کرلیں۔تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے پیرول پر رہائی کیلئے دائر درخواست پر احتساب عدالت میں سماعت ہوئی،درخواست سابق وزیراعظم کی ہمشیرہ سعدیہ عباسی کی جانب سے دائر کی گئی ہے،درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ 5بجے تایاکاجنازہ ہے، شاہدخاقان کورہائی دی جائے تووقت تبدیل کرسکتے ہیں،پراسیکیوٹر نیب نے سابق وزیراعظم کی پیرول پر رہائی کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ یہ معاملہ عدالت کے دائرہ کار میں نہیں آتا، شاہد خاقان عباسی نیب کی حراست میں ہیں یہ معاملہ نیب کے دائرہ کارمیں آتا ہے، درخواستگزار سعدیہ عباسی نے کہا کہ میں صبح نیب کے دفتر گئی تو کہا گیا کہ عدالت اجازت دے سکتی ہے،جج محمد بشیر نے کہا کہ کیس کے تفتیشی افسر کو بلا لیں،ان کا کیا موقف ہے؟،عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد شاہد خاقان عباسی کی پیرول پر رہائی کی درخواست پر محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے سابق وزیراعظم کو تایا کے جنازہ میں شرکت کی مشروط اجازت دیدی،عدالت نے پیرول پر رہائی ضلعی انتظامیہ کی فول پروف سکیورٹی سے مشروط کر دی،عدالت نے کہا کہ سکیورٹی کی ذمے داری لیں تو ڈی جی نیب جنازے میں شرکت کی اجازت دیں ،جج نے ہدایت کی ڈجی جی نیب پیرول پر رہائی کے ضروری اقدامات مکمل کرلیں۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد /اہم خبریں


loading...