لودھراں:محکمہ صحت میں جعلی اپ گریڈیشن، سیکرٹری ہیلتھ کا سخت نوٹس  

  لودھراں:محکمہ صحت میں جعلی اپ گریڈیشن، سیکرٹری ہیلتھ کا سخت نوٹس  

  

 گوگڑاں (نمایندہ پاکستان)  روز نامہ پاکستان نے گزشتہ ہفتے محکمہ صحت میں چند سال قبل کی جانے والی اپ گریڈیشن پر دو نمبری کی نشاندہی کی تھی جس میں بتایا گیا تھا کہ محکمہ صحت میں پیرا میڈکس ویکسینٹر میڈکل اسسٹنٹ سمیت مختلف شعبوں  میں رشوت کے(بقیہ نمبر8صفحہ10پر)

 عوض جعلی اپ گریڈیشن کرتے ہوئے سرکاری خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا دیاجس سے ممکنہ کے طور پر  جعلی اپ گریڈیشن کے ملازمین کی تنخواہوں میں 25 لاکھ روپے  سرکاری خزانے کو اب بھی نقصان ہو رہا ہے باوثوق ذرائع بتایا گیا ہے کہ محکمہ صحت میں اپ گریڈیشن کی مد میں ہونے والی دو نمبری میں اہم کردار محکمہ خزانہ کا ہے محکمہ خزانہ نے پانچ فیصد کمیشن وصول کرتے ہوئے پرانی پیمنٹوں کی اجازت ڈپٹی کمشنر سے لینے کی بجائے غیر قانونی طریقے سے خود  ہی کردی  اکاونٹس آفس کو  اس نمبری کا سب علم ہے کہ ہمارے پاس یے سب جعلیاپ گریڈیشن والے بل پاس ہو رہے ہیں مگر ان کو تو کمیشن سے غرض ہے محکمہ اکاونٹس آفس سے جتنا مرضی جعلی بل ہو ان کو اس سے کوئی غرض نہیں ہوتی بس کمیشن ملنا چاہئیگزشتہ روز  سیکرٹری ہیلتھ پنجاب نے روز نامہ پاکستان کی خبر پر  سخت ترین ایکشن لیتے ہوئے لودھراں میں ہونے والی جعلی اب گرڈیشن کو ختم کرنے کا لیٹر جاری کیا جس سے ٹاوٹ مافیاز کی پریشانی میں مزید اضافہ ہوگیا ہے باوثوق ذرائع سے یے بھی بتایا گیا ہے کہ ماضی میں بھی اس طرح کے کئی لیٹر سیکرٹری ہیلتھ سے محکمہ صحت کے افسران کو وصول ہوچکے ہیں مگر مافیاز اس پر عملدرآمد نہیں ہونے دیتے  اب بھی مافیاز نے اس لیٹر کے بعد سیاسی ڈیروں پر چکر لگانے شروع کردیں ہیں تاکہ اس اپ گریڈیشن کو ریوالڈ نہ ہونے دیں اسی طرح دونمبری سے کام چلتا رہے۔

نوٹس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -