پولیس قبضہ گروپ بن جائے تو پھر موٹروے جیسے واقعات ہوں گے ، چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کے متروکہ وقف املاک بورڈ کی زمین پر قبضے کے کیس میں ریمارکس

 پولیس قبضہ گروپ بن جائے تو پھر موٹروے جیسے واقعات ہوں گے ، چیف جسٹس لاہور ...
 پولیس قبضہ گروپ بن جائے تو پھر موٹروے جیسے واقعات ہوں گے ، چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کے متروکہ وقف املاک بورڈ کی زمین پر قبضے کے کیس میں ریمارکس

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) متروکہ وقف املاک بورڈ کی زمین پر پولیس کے قبضے کے کیس میں چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ لاہور پولیس ملک میں قبضہ گروپ بن گئی ہے ،پولیس قبضہ گروپ بن جائے تو پھر موٹروے جیسے واقعات ہوں گے ۔

نجی ٹی وی جی این این کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں متروکہ وقف املاک بورڈ کی زمین پر پولیس کے قبضے کے کیس کی سماعت ہوئی ، درخواست گزار کی جانب سے موقف اختیار کیاگیا کہ متروکہ وقف املاک بورڈ کی اراضی پرایلیٹ فورس کا دفتر قائم کیاگیا ،پولیس نے جو اراضی سرنڈر کی وہ بھی متروکہ وقف کو نہیں دے رہی ۔

عدالت نے ڈی آئی جی ایلیٹ فورس کو متروکہ وقف املاک بورڈ کی اراضی پر قبضے سے روک دیا،چیف جسٹس قاسم خان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ لاہور پولیس ملک میں قبضہ گروپ بن گئی ہے،پولیس قبضہ گروپ بن جائے تو پھر موٹروے جیسے واقعات ہوں گے ،چیف جسٹس ہائیکورٹ نے کہاکہ سوسائٹی کو زندہ رکھنا ہے تو افسروں کو معاف کرنے کی روش کو چھوڑ دی ،آئندہ سماعت پر آئی جی پنجاب بھی پیش ہوں گے ۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -