جگنو کے نام | افتخارنسیم |

جگنو کے نام | افتخارنسیم |
جگنو کے نام | افتخارنسیم |

  

جگنو کے نام

کسی نے کہاتھا جانوروں سے پیار کرو

بچے کھلونوں سے ہی کھیلتے اچھے لگتے ہیں

پالتو رکھنا تو عیاشی ہوتی ہے

تم سے بچھڑے اور بچپن کی مد سے نکلے

مجھ کو تو اک عمر ہوئی

پھر بھی میں اپنے اندر کے بچے کو

بالغ ہونے اور مرنے سے روک رکھا ہے

بچے بھی توگھر کے پالتو ہوتے ہیں

اب تو سب کچھ پاس ہے میرے

پھر بھی ایسا کیوں ہوتا ہے

جب میں رات کو سو جاتا ہوں

اک بلی دروازے کے باہر آتی ہے

رات گئے روتی رہتی ہے

شاعر: افتخار نسیم

(رسالہ"سب رس"افتخار نسیم نمبرسے انتخاب، شمارہ نمبر 1992،11)

Jugnu    K    Naam

Kisi    Nay    Kah   Tha    Jaanwaron   Say   Payaar   Karo

Bachhay  ,  Khilonon   Say   Hi   Khailtay    Achhay   Lagtay   Hen

Paaltu   Rkhan    To   Ayyaashi    Hoti   Hay

Tum   Say   Bichhrray   Aor   Bachpan   Ki    Madd   Say   Niklay

Mujh   Ko   To   Ik   Umr   Hui

Phir     Bhi   Main   Nay   Apnay    Andar    K    Bachay   Ko

Baaligh    Honay   Aor   Marnay   Say   Rok    Rakha   Hay

Bachay     Bhi   To   Ghar   K   Paaltu   Hotay   Hen

Ab   To   Sab   Kuch   Paas   Hay   Meray

Phir   Bhi   Aisa   Kiun    Lagta   Hay

Jab    Main    Raat    Ko   So    Jaata    Hun

Ik   Billi    Darwaazay    K    Baahar   Aati    Hay

Raat    Gaey    Roti    Rehti   Hay

Poet: Iftikhar    Naseem

مزید :

شاعری -سنجیدہ شاعری -