لڑکی کو ہراساں ہوتے دیکھ کر اجنبی لڑکے نے سوشل میڈیا پر پوسٹ لگادی، پھر کیا ہوا؟ جان کر ہر پاکستانی ایسا ہی کرنے لگ جائے

لڑکی کو ہراساں ہوتے دیکھ کر اجنبی لڑکے نے سوشل میڈیا پر پوسٹ لگادی، پھر کیا ...
لڑکی کو ہراساں ہوتے دیکھ کر اجنبی لڑکے نے سوشل میڈیا پر پوسٹ لگادی، پھر کیا ہوا؟ جان کر ہر پاکستانی ایسا ہی کرنے لگ جائے
کیپشن:    سورس:   Twitter/@Abdullahbokh96

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ دنوں اسلام آباد میں کچھ اوباش ایک لڑکی کو ہراساں کر رہے تھے کہ وہاں موجود ایک اور لڑکی نے یہ واقعہ اپنے بھائی کو بتایا اور اس کے بھائی نے ذمہ دار شہری ہونے کا ایسا ثبوت دیا کہ جان کر ہر پاکستانی اس طرز عمل کو اپنا لے۔

زینب فاطمہ نامی اس لڑکی نے فیس بک پر یہ واقعہ بیان کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ”اسے کہتے ہیں ذمہ دار شہری ہونا۔ میں ایف 7اسلام آباد میں تھی جہاں کچھ لڑکے ایک لڑکی کو ہراساں کر رہے تھے۔ میں نے یہ واقعہ اپنے بھائی کو بتایا اور اس نے فوری طور پر ٹوئٹر پر اس حوالے سے ایک ٹویٹ کر دی۔“

زینب نے مزید لکھا کہ ”میرے بھائی نے اپنی ٹویٹ میں متعلقہ حکام کو بھی ٹیگ کیا جس پر ان حکام نے ایکشن لیتے ہوئے ملزمان کو گرفتارکرکے ا ن کے خلاف مقدمہ درج کر لیا۔“

زینب نے اپنی فیس بک پوسٹ میں زیرحراست ملزمان کی تصویر اور ان پر درج ہونے والے مقدمے کی نقل بھی پوسٹ کی۔ اس کے علاوہ متعلقہ حکام نے زینب کے بھائی کی ٹویٹ پر جو ردعمل دیا اس کے سکرین شاٹس بھی اس نے پوسٹ کا حصہ بنائے۔ زینب کا کہنا تھا کہ ”ہم سب کو ایک دوسرے کی مدد کرنے کی ضرورت ہے۔ اسی طریقے سے ہم اپنی ماﺅں، بہنوں اور بیٹیوں کے لیے ایک محفوظ ماحول پیدا کر سکتے ہیں۔“ 

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -