پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس جاری ،اپوزیشن نے ایک بار پھر ایسا کام کر دیا کہ ہر کوئی حیران رہ جائے 

پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس جاری ،اپوزیشن نے ایک بار پھر ایسا کام کر دیا کہ ہر ...
پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس جاری ،اپوزیشن نے ایک بار پھر ایسا کام کر دیا کہ ہر کوئی حیران رہ جائے 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس جاری ہے جبکہ اپوزیشن اراکین نے بلاول بھٹو زرداری کو بولنے کا موقع نہ دینے اور تمام ترامیم مسترد ہونے پر ایوان سے واک آؤٹ کر دیا ہے،بلاول بھٹو زرداری اور مسلم لیگ ن کے صدر میاں شہباز شریف سمیت اپوزیشن اراکین ایوان سے واک آؤٹ کر گئے ہیں تاہم اپوزیشن کی غیر موجودگی میں قانون سازی کا عمل جاری ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق پارلیمنٹ کا ہنگامہ خیز مشترکہ اجلاس  سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی زیر صدارت ہو رہا ہے،اپوزیشن اراکین نے بلاول بھٹو زرداری کو بولنے کا موقع نہ دینے اور تمام ترامیم مسترد ہونے پر ایوان سے واک آؤٹ کر دیا ہے تاہم  اینٹی منی لانڈرنگ بل کی شق وار منظوری کا عمل جاری ہے۔ وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا کہ بلاول بھٹو نے ترمیم پیش نہیں کی تو بات کیسے کر سکتے ہیں؟۔ انہوں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جس نے ترمیم پیش کی وہ بات کر سکتے ہیں۔

اس سے قبل  اینٹی منی لانڈرنگ دوسرا ترمیمی بل پیش کرنے کی تحریک منظور کر لی گئی۔ بل مشیر پارلیمانی امور  ڈاکٹر بابر اعوان نے ایوان میں پیش کیا۔ بابر ایوان کے بل پیش کرنے پر پیپلزپارٹی کے سینیٹر رضا ربانی نے اعتراض بھی کیا کہ مشیر یا معاون خصوصی بل نہیں پیش کر سکتے کیونکہ یہ وزیر نہیں ہیں اور نہ ہی مشیر ، معاون خصوصی ووٹ کاسٹ کر سکتے  لیکن سپیکر اسد قیصر نے رضا ربانی کا اعتراض مسترد کر دیا اور بل پیش کرنے کی اجازت دے دی۔ اجلاس میں اپوزیشن اور تحریک انصاف پر قانون سازی کے حوالے سے کافی نوک جھونک دیکھنے کو ملی ۔ اپوزیشن کے شورشرابہ سے ایوان مچھلی منڈی کا منظر پیش کرنے لگا۔

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -قومی -