خان صاحب قوم کے اچھے دن کب آئیں گے ، بلاول بھٹو زرداری نے بھی وزیر اعظم سے سوال پوچھ لیا

خان صاحب قوم کے اچھے دن کب آئیں گے ، بلاول بھٹو زرداری نے بھی وزیر اعظم سے ...
خان صاحب قوم کے اچھے دن کب آئیں گے ، بلاول بھٹو زرداری نے بھی وزیر اعظم سے سوال پوچھ لیا

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے کہا کہ پٹرول پانچ روپے مزید مہنگا ہو گیا، خان صاحب قوم کے اچھے دن کب آئیں گے ۔

بلاول بھٹو نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ مسترد کرتے ہوئے کہا کہ پٹرول بلند ترین سطح پر پہنچا کر عوام کی جیبوں پر ڈاکا مارا گیا، بجٹ کے بعد عوام کو ریلیف پہنچانے کے بڑے بڑے دعوے کہاں گئے ۔

ادھر پاکستان پیپلزپارٹی کی سینئر رہنما شیری رحمان نے کہا کہ نیا پاکستان اب مہنگاپاکستان بن چکا ہے ، حکومت نے تین سال میں تیل کی قیمتوں میں 28روپے فی لٹر اضافہ کیا، 95روپے میں ملنے والا پٹرول نئے پاکستان میں 123 روپے فی لٹر ہو چکا ہے ، کہتے تھے ان کی حکومت میں تیل کی قیمت 60روپے فی لٹر ہو گی ، لوگوں کی آمدن میں کمی ، مہنگائی میں اضافہ ہو رہاہے ۔

واضح رہے فاقی حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں پانچ روپے سے زائد کا اضافہ کیا ہے جس کا اطلاق گزشتہ رات 12 بجے سے ہو چکا ہے ، وزارت خزانہ کے مطابق  وفاقی حکومت نے پٹرول پانچ روپے جبکہ ڈیزل پانچ روپے ایک پیسہ فی لٹر مہنگا  کرنے کی منظوری دے دی۔ مٹی کے تیل کی قیمت میں پانچ روپے 42 پیسے جب کہ لائٹ ڈیزل کی قیمت میں پانچ روپے 92 پیسے کا اضافہ کیا گیا ہے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق حالیہ اضافے کے بعد پٹرول 123 روپے 30 پیسے اور ہائی سپیڈ ڈیزل 120 روپے چار پیسے فی لٹر ہوگیا ہے۔ مٹی کا تیل 92 روپے 26 پیسے ، لائٹ ڈیزل کی قیمت 90 روپے 69 پیسے ہوگئی ہے۔

یہاں یہ بھی واضح رہے کہ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے گزشتہ روز پٹرول ایک روپیہ اور ڈیزل ساڑھے 10 روپے مہنگا کرنے کی تجویز دی تھی تاہم حکومت نے دونوں کو ملا کر 10 روپے مہنگا (پٹرول 5، ڈیزل 5.01 روپے) کرنے کی منظوری دی  ہے،  اس کے علاوہ مٹی کا تیل تجویز سے آٹھ پیسے کم اور لائٹ ڈیزل اوگرا کی تجویز سے 42 پیسے زیادہ مہنگا کیا گیا ہے۔

مزید :

اہم خبریں -سیاست -