ضلعمظفرگڑھ کے سرکاری ہسپتالوں میں ہیپاٹائٹس کی ادویات ختم

ضلعمظفرگڑھ کے سرکاری ہسپتالوں میں ہیپاٹائٹس کی ادویات ختم

  

کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر) ضلع مظفرگڑھ کی تمام سرکاری ہسپتالوں میں ہیپاٹائٹس بی سی کے مریضوں کی ادویات ایک ماہ سیختم ہوگئی ہیں جسکی وجہ سیہیپاٹائٹس بی سی کے(بقیہ نمبر27صفحہ6پر)

 مریض شدید اذیت میں مبتلاہیں،ضلع مظفرگڑھ کی سب سے بڑی تحصیل ہیڈکوارٹرہسپتال میں بنائیگئیہیپاٹائٹس کلینک میں بھی ہیپاٹائٹس بی سی کی ادویات نہ ہونے سے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں رجسٹرڈ24ہزارمریض شدید اذیت میں مبتلاہیں،کوٹ ادوکاشمار ہیپاٹائٹس کیسب سیزیادہ متاثرہ علاقوں میں ہوتا ہے،2010کے بدترین سیلاب کے بعدزیرزمین پانی مضر صحت اوراتائیوں کی بھرمار کی وجہ سے کوٹ ادو میں ہیپاٹائٹس کی پانچوں اقسام کے مریض پائے جاتے ہیں حکومت کی جانب سے مریضوں کو ہیپاٹائٹس کی فری ادویات فراہم کی جاتی ہیں،لیکن گزشتہ ایک ماہ سے ہیپاٹائٹس کے مریضوں کو ادویات نہیں مل رہیں جس پر مریض بازار سے مہنگی اویات لینے پر مجبور ہیں جسکی وجہ سیمریضوں کی مشکلات بڑھ رہی ہیں اور ہیپاٹائٹس کے مریضوں کی حالت بگڑ رہی ہیاورانہیں ہیپاٹائٹس کی پیچیدگیوں اور کینسر جیسی بیماریوں میں مبتلا ہونے کا خدشہ ہے،اس حوالے سے ہیپاٹائٹس کلینک کے انچارج ڈاکٹرسید عمران مہتاب نے بتایا کہ ادویات بارے محکمہ صحت کے اعلی حکام کوگاہ کردیا ہے،ٹینڈراور پرچیزنگ نہ ہونے کی وجہ سے ادویات کا مسئلہ ہے جو جلد ہل کرلیا جائے گا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -