ہائی وے شعبہ حصول اراضی میں کرپشن، ملزمان کو فائدہ پہنچانے کیلئے تفتیش تبدیل

ہائی وے شعبہ حصول اراضی میں کرپشن، ملزمان کو فائدہ پہنچانے کیلئے تفتیش تبدیل

  

ملتان (وقائع نگار)محکمہ  ہائی وے کے شعبہ حصول اراضی میں کروڑوں روپے کرپشن کا معاملہ ڈائریکٹر اینٹی کرپشن نے مقدمہ کے ملزمان کو فائدہ پہنچانے کے الزام پر تفتیش تبدیل کرکے لیگل ٹیم کو سونپ دی ہے اس پر 3 رکنی ٹیم بھی تشکیل دے دی گئی محکمہ  ہائی وے(بقیہ نمبر42صفحہ6پر)

 کے شعبہ حصول اراضی میں بوگس ادائیگیوں کے زریعے 56 کروڑ روپے خرد برد کرلئے  جس سابق لینڈ ایکوزیشن کلکٹر ملک ظہور احمد اعوان   تحصیلدار محمد طاہر بوٹا، عبدالغنی خان حال سب رجسٹرار ملتان،رائے عنایت افتخار احمد قریشی۔چوہدری وسیم احمد محمد ظفر اقبال،حافظ جمیل الرحمان  اور محمد یونس شامل ہیں۔اس طرح 10 قانونگو مظہر حیات ،محمد یونس چودھری، محمد ابراہیم، سردارعلی، محمدحیات  اورنگزیب صہیب اقبال،محمد اعظم،محبوب احمد شامل ہیں جبکہ اکانٹس آفس کے ڈپٹی ڈسٹرکٹ اکانٹ آفیسر ملتان ارشاد حسین،ڈپٹی ڈسٹرکٹ اکانٹ آفیسر ملتان محمد الطاف،محمد اقبال صدیقی،محمد حنیف شاہد،مشاہد رضا خان،امتیاز احمد علوی،جہانزیب،ملک جاوید اقبال، محمد سجاد میتلا، شیخ شبیر احمد اور محمد امجد مرکزی کردار سابق یوسی چیئرمین  اور پاکستان تحریک انصاف کے مقامی رہنما ساجد نواز کھوکھر شامل ہیں اس مقدمہ کی انکوائری آفیسر عامر چیمہ کررہے ہیں جن سے تفتیش لے کر لیگل ٹیم کودے دی گئی ہے  ڈائریکٹر اینٹی کرپشن نے 3 رکنی ٹیم تشکیل دی ہے جو چالان مکمل کرکے ملزمان کے خلاف کارروائی عمل میں لائی گئی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -