ملکہ الزبتھ دوم کا تابوت آخری  دیدار کیلئے ویسٹ منسٹر ہال منتقل

ملکہ الزبتھ دوم کا تابوت آخری  دیدار کیلئے ویسٹ منسٹر ہال منتقل

  

لندن (آن لائن) آنجہانی ملکہ برطانیہ الزبتھ دوم کا تابوت بکنگھم پیلس سے ویسٹ منسٹر ہال پہنچا دیا گیا۔ ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق ملکہ کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کے لیے برطانوی فوج کی پریڈ، ہائیڈ پارک میں توپوں کی سلامی پیش کی گئی، دعائیہ تقریب میں بادشاہ چارلس سوئم اور شاہی خاندان کے دیگر افراد نے شرکت کی۔اس کے علاوہ شہریوں نے بھی ملکہ کو خراجِ عقیدت پیش کیا، عوامی خراجِ عقیدت کے لیے ملکہ کا تابوت چار دن تک ویسٹ منسٹر ہال میں ہی رہے گا۔خیال رہے کہ برطانیہ پر سب سے طویل عرصے تک حکمرانی کرنے والی ملکہ برطانیہ الزبتھ دوم کا  8 ستمبر کو انتقال ہوگیا تھا اور ان کی آخری رسومات پیر19 ستمبر کو ادا کی جائیں گی،ملکہ برطانیہ کی آخری رسومات کے موقع پر شہزادہ ہیری کو فوجی لباس پہننے سے روکا گیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق گزشتہ روز ملکہ الزبتھ دوم کی میت بکنگھم پیلس سے ویسٹ منسٹر ہال جلوس کی صورت میں لائی گئی۔شاہی خاندان کی روایت کے مطابق ملکہ کی میت کو برطانوی افواج کے دستے نے خراجِ عقیدت پیش کرتے ہوئے جلوس کی صورت میں ویسٹ منسٹر ہال پہنچایا۔جلوس میں گن کیرج پر رکھے ہوئے ملکہ کے تابوت کے پیچھے چلنے والوں میں شاہ چارلس، شہزادی این، شہزادہ اینڈریو، شہزادہ ایڈورڈ، شہزادہ ولیم اور شہزادہ ہیری سمیت شاہی خاندان کے دیگر افراد بھی جلوس میں شامل تھے۔اس موقع پر شاہی روایت کے مطابق شاہی اہلِ خانہ فوجی لباس میں ملبوس تھے جبکہ شہزادہ ہیری اور شہزادہ اینڈریو نے سادہ سیاہ لباس زیب تن کیا ہوا تھا۔شہزادہ ہیری اور ان کی اہلیہ میگھن مارکل 2020 میں شاہی ذمے داریوں دستبردار ہو گئے تھے جس کے بعد انہیں کسی بھی شاہی تہوار یا تقریب کے دوران فوجی لباس زیب تن کرنے کی اجازت نہیں۔شاہی ترجمان کے مطابق شہزادہ ہیری آخری رسومات میں ملکہ کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کے لیے تمام رسومات کے دوران سیاہ سوٹ ہی زیب تن کریں گے۔ترجمان کا کہنا تھا کہ شہزادہ ہیری کو اگلی 5 روزہ تقریبات میں بھی فوجی لباس پہننے کی اجازت نہیں ہے۔

آخری دیدار

مزید :

صفحہ اول -