صوبائی چیئر مین سکندر حیات شیر پاؤ کی آٹے کی قیمتوں میں اضافہ پر تشویش

    صوبائی چیئر مین سکندر حیات شیر پاؤ کی آٹے کی قیمتوں میں اضافہ پر تشویش

  

        پشاور (سٹی رپورٹر)  قومی وطن پارٹی کے صوبائی چیئرمین سکندر حیات خان شیرپاؤنے آٹے کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ صوبہ خیبر پختونخوا میں آٹے کا بحران پیدا ہونے کا خدشہ پیدا ہو گیاہے جبکہ یہاں کے عوام کوپہلے ہی عام استعمال کی اشیا کی قیمتوں میں اضافہ،ہوشربا مہنگائی،بے روزگاری اور پسماندگی جیسے مسائل کاسامنا ہے۔وطن کور پشاور میں پارٹی کے وفود کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے  انھوں نے کہا کہ صوبے میں آٹے کی کمی اور اس کی قیمتوں میں آئے روز اضافہ صوبائی حکومت کی نااہلی ہے۔انھوں نے صوبہ خیبر پختونخوا میں پی ٹی آئی کی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ عوام کو آٹا سمیت دیگر بنیادی ضروریات کی فراہمی حکومت کی ذمہ داری ہے جبکہ وہ صوبہ کے عوام کو بنیادی ضروریات کی فراہمی میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے۔انھوں نے مزید کہا کہ اگرصوبائی حکومت ٹھوس منصوبہ بندی کے ساتھ آگے چلتی تو آج صوبے کے عوام کو اس سنگین مسئلے کا سامنا پیش نہ آتا۔انھوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت صوبہ اور عوام کے حقوق و تحفظ کیلئے کوئی کردار ادا نہیں کر رہی ہے اور ان کی خراب طرز حکمرانی کی وجہ سے صوبہ  اور عوام اپنے حقوق سے محروم ہوتے جارہے ہیں۔انھوں نے کہاکہ ہم پہلے ہی کہہ چکے تھے کہ پی ٹی آئی کی حکومت میں صوبہ اور عوام کو بحرانوں سے نکالنے کی اہلیت نہیں اوریہ اب عملی طور پر آشکارہ ہو گیا ہے۔۔ انھوں نے مطالبہ کیا کہ صوبہ میں جاری آٹا بحران اور اس کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کو قابو کرنے کیلئے ٹھوس منصوبہ بندی ترتیب دیدی جائے تاکہ صوبہ کے عوام کو آنے والے اس بحران سے بچایا جاسکے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -