بوسٹن دھماکوں میں ملوث عناصر کو انصاف کے کٹہرے میں لا ئیں گے اوباما

بوسٹن دھماکوں میں ملوث عناصر کو انصاف کے کٹہرے میں لا ئیں گے اوباما

                      بوسٹن ۔واشنگٹن(آن لائن) امریکی صدر بارک اوباما نے اعلان کیا ہے کہ بوسٹن دھماکوں میں ملوث عناصر کو تلاش کرکے انصاف کے کٹہرے میں لائیں گے۔غیرملکی نیوز ایجنسی کے مطابق دھماکوں کے بعد قوم سے مختصر خطاب میں صدر اوباما نے دہشت گردی کا لفظ استعمال نہیں کیا۔ ان کا کہنا تھا ابھی یہ نہیں پتہ کہ دھماکے کس نے کئے۔ لوگوں کو بھی اس وقت تک کسی نتیجے پر نہیں پہنچنا چاہئے جب تک تمام حقائق سامنے نہ آجائیں۔ صدر اوباما نے کہا کہ پوری گہرائی میں جائیں گے اور پتہ لگائیں گے کہ یہ کس نے کیا اور کیوں کیا؟ جو بھی شخص یا گروپ اس میں ملوث ہے اسے انصاف کے کٹہرے میں لائیں گے۔ صدر اوباما کا کہنا تھا کہ انتظامیہ کو جہاں ضروری ہوا وہاں سیکیورٹی بڑھانے کی ہدایت کردی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بوسٹن میں صورت حال کی مسلسل مانیٹرنگ کی جارہی ہے۔ ایف بی آئی اور ہوم لینڈ سیکیورٹی کو ضروری وسائل بروئے کار لانے اور بوسٹن انتظامیہ کو متاثرین کی ہرممکن امداد اور تعاون کی ہدایت کی ہے۔ اوباما نے بوسٹن دھماکوں کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔وائٹ ہاوس کے مطابق صدر بارک اوباما کو ہوم لینڈ سیکیورٹی کی جانب سے دھماکوں پر بریفنگ بھی دی گئی۔ صدر اوباما نے بوسٹن کے میئر اور میسا چوسٹس کے گورنر سے ٹیلی فون پر بھی گفتگو کی۔ صدر اوباما نے دھماکوں کی تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ دھماکوں کی تحقیقات کے لیے تعاون کیا جائے۔

مزید : صفحہ اول